Thursday, July 26, 2018

”سنی لیونی واحد بھارتی نہیں جنہوں نے فحش فلموں میں کام کیا بلکہ۔۔۔“ ایسی 10 بھارتی لڑکیاں منظرعام پر آ گئیں جنہوں نے بیرون ملک جا کر فحش فلموں میں اداکاری شروع کی، تفصیلات جان کر آپ کی حیرت کی انتہاءنہ رہے گی

Tags
سنی لیونی بھارتی نژاد کینیڈین شہری ہیں جنہوں نے فحش فلموں میں اداکاری کے ذریعے شہرت کمائی اور پھر واپس بھارت آ کر بالی ووڈ میں اپنے حسن کے جلوے بکھیرے۔ آج وہ بھارت کی معروف اداکاراﺅں میں شریک ہوتی ہیں اور دنیا بھر میں ان کے کروڑوں مداح موجود ہیں۔ یہ بھی پڑھیں۔۔۔”فخرزمان کا اب پاکستانی ٹیم کیلئے کوئی فائدہ باقی نہیں رہا کیونکہ۔۔۔“ عامر سہیل نے اوپننگ بیٹسمین کے بارے میں انتہائی تشویشناک بات کہہ دی لیکن آپ کو یہ جان کر حیرت ہو گی کہ سنی لیونی واحد بھارتی خاتون نہیں ہیں جنہوں نے فحش فلموں میں اداکاری بلکہ ان کے علاوہ بھی کئی لڑکیوں نے اس پیشے کو چنا اور شہرت حاصل کی۔ پریا انجلی ضرور پڑھیں:عمران خان ووٹ ڈال کر نکلے تو انہوں نے اپنی گاڑی میں کونسا معروف ترین گانا اونچی آواز میں لگا لیا؟ یہ کوئی پی ٹی آئی کا ترانہ نہیں تھا بلکہ۔۔۔ جواب آپ سوچ بھی نہیں سکتے ضرور پڑھیں:تمام سابق کرکٹرز عمران خان کو سپورٹ کر رہے ہیں لیکن یونس خان نے ایسی جماعت کو سپورٹ کرنے کا فیصلہ کر لیا کہ عمران خان بھی حیران رہ جائیں گے پریا انجلی نئی دہلی میں پیدا ہوئیں جنہیں 2 سال کی عمر میں امریکی جوڑے نے گود لے لیا اور منی سوٹا لے گئے جہاں ان کی پرورش ہوئی۔ انہوں نے ایری زونا یونیورسٹی سے مارکیٹنگ کی تعلیم حاصل کی جس کے بعد فحش فلموں میں اداکاری کا فیصلہ کیا اور 29 سال کی عمر میں 2007ءمیں پہلی فلم میں نظر آئیں۔ تاہم بعد ازاں انہوں نے اپنی انفرادی زندگی اور دیگر معاملات پر توجہ دینے کیلئے انڈسٹری کو خیرباد کہہ دیا۔ انجلی کارا انجلی کارا بھی بھارت میں پیدا ہوئیں اور 2003ءمیں فحش فلموں کی دنیا میں قدم رکھتے ہیں شہرت کی بلندیوں پر پہنچ گئیں۔ انہوں نے 2007ءتک فحش فلموں میں اداکاری کی اور پھر انڈسٹری کو چھوڑ دیا، آج کل وہ انگلینڈ میں مقیم ہیں۔ لی جے لی جے ویسے تو برطانوی کاﺅنٹی سرے کے علاقے کروئیڈن میں پیدا ہوئیں مگر ان کے والدین بھارتی ہیں۔ انہوں نے 21 سال کی عمر میں فحش فلموں کی دنیا میں قدم رکھا اور اب بھی کام جاری رکھے ہوئے ہیں۔ جیڈ جیول جیڈ جیول بھارتی شہر حیدرآباد میں پیدا ہوئیں اور آٹھ سال کے بعد انگلینڈ منتقل ہو گئیں اور پھر امریکہ چلی گئیں۔ کہتے ہیں کہ جب وہ نوجوان لڑکی تھیں تو بہت قدامت پسند تھیں مگر 1997ءمیں انہوں نے اپنی فحش ویب سائٹ بنا لی اور اس وقت ان کی عمر صرف 21 سال تھی۔ ڈیسٹینی ڈیویل ڈیسٹینی ڈیویل بھی بھارتی ہیں جبکہ ان کا اصل نام سبینا تھا لیکن انگلینڈ میں فحش فلموں کی انڈسٹری میں قسمت آزمائی شروع کرتے وقت انہوں نے نام بدل لیا۔ ڈیسٹینی ڈیویل نے صرف 19 سال کی عمر میں ہی فحش فلموں میں اداکاری شروع کر دی تھی۔ آریانا مسٹری آریانا مسٹری بھی بھارتی ہیں اور انہیں بھارتی فحش فلموں کی اداکارہ انجلی کارا نے فحش فلموں کی انڈسٹری میں متعارف کرایا۔ جیسمین چوہدری جیسمین چوہدری بھارت میں پیدا ہوئیں اور بھارت میں ہی فحش فلموں میں اداکاری شروع کر دی۔ وہ ملک میں بننے والی فلموں میں اداکاری کرتی ہیں۔ مادھوری پاٹیل جیسا کہ نام سے ہی ظاہر ہے کہ مادھوری پاٹیل بھی بھارتی ہیں اور فحش فلموں کی دنیا میں کافی شہرت رکھتی ہیں۔ شازیہ سہاری شازیہ سہاری بھی بھارتی ہیں جنہوں نے 2011ءمیں صرف 27 سال کی عمر میں فحش فلموں میں اداکاری شروع کر دی تھی۔ وہ اب تک کئی فلموں میں کام کر چکی ہیں۔ راکھی

کس کو کونسی وزرات دی جائے گی ؟ انتخابات میں واضح برتری حاصل کرتے ہی پی ٹی آئی کے کئی امیدوار سامنے آگئے

Tags
اسلام آباد(ویب ڈیسک)وفاق اور دو صوبوں میں کامیابی کے بعد تحریک انصاف میں وزرائے اعلیٰ اور وزارتوں کے امیدوار سامنے آگئے ہیں۔نجی ٹی وی نیوز کے مطابق غیر سرکاری غیر حتمی نتائج کے مطابق تحریک انصاف کے پاس وفاق کے علاوہ پنجاب اور خیبر پختونخوا میں حکومت بنانے کے لئے مطلوبہ اکثریت حاصل ہوگئی ہے ۔ جس کے بعد اب پارٹی میں وزرائے اعلیٰ اور اہم وزارتوں کے امیدوار بھی سامنے آگئے ہیں۔ذرائع کا کہنا ہے کہ شاہ محمود قریشی،علیم خان اور فواد چوہدری وزیر اعلی پنجاب کے امیدوار ہیں جب کہ گزشتہ دور حکومت میں خیبر پختونخوا کے صوبائی وزیر عاطف خان اب وزارت اعلیٰ کے امیدوار ہیں۔سابق وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا پرویز خٹک کی نظریں وفاقی وزارت داخلہ پر ہے، ڈاکٹر شیریں مزاری وزارت خارجہ اور نیشنل سیکیورٹی ڈویژن کی خواہشمند ہیں۔ جب کہ اسد عمر کو عمران خان پہلے ہی وزیر خزانہ نامزد کر چکے ہیں ۔واضح رہے اب ہے مرحلہ حکومت سازی کا، سب کے پتے شو ہوچکے ہیں کہ کس کے پاس کیا ہے۔ بظاہر مرکز۔ خیبرپختونخوا اور پنجاب میں تحریک انصاف حکومت بنانے کی پوزیشن میں نظر آرہی ہے۔ بلوچستان میں ” باپ ” کی حکومت بننے کے چانس ہیں کیونکہ ” مما ” وہاں سے ہار گئی ہے۔ ماں باپ کے جھگڑوں میں زیادہ نقصان اولاد کو اٹھانا پڑتا ہے۔ سندھ میں حسب روایت حسبِ معمول پیپلزپارٹی حکومت بنائے گی مگر شہری سندھ میں تحریک انصاف بڑی جماعت بن کر ابھری ہے جو کہ مضبوط اپوزیشن کا کردار ادا کرے گی۔یوں تو عمران خان سو دن کا ٹارگٹ دے چکے ہیں تو کم از کم سو دن تو انہیں دینا چاہیے کہ وہ کیا رزلٹ دیتے ہیں۔ کاغذی باتوں سے قطع نظر اگر تبدیلی کی خالق سرکار چند بنیادی معاملات پر توجہ دے تو یقیناً عوام کی دعائیں اسکا مقدر ہونگی

عمران خان اگر جیت بھی جاتے ہیں پھر بھی۔۔۔۔۔الیکشن کمیشن سے آنے والی خبر نے ٹائیگروں کے لیے خطرے کی گھنٹی بجا دی

Tags
اسلام آباد (ویب ڈیسک) سیکرٹری الیکشن کمیشن بابر یعقوب نے کہاہے کہ ووٹ دکھانے کا جرم ثابت ہوا توچیئرمین تحریک انصاف عمران خان کو سزا بھی ہو سکتی ہے۔تفصیلات کے مطابق اپنے ایک بیان میں بابر یعقوب کا کہناتھا کہ فرسٹ کلاس مجسٹریٹ کے اختیار کتنے استعمال ہوئے فی الحال اطلاع نہیں، پہلے بیلٹ پیپرز کے لیے سستا کاغذ استعمال ہوتا تھامگر اس بار مہنگا ہے جبکہ سب سے زیادہ اخراجات عملے کی تربیت پر ہوئے۔انہوں نے کہاکہ سراج رئیسانی شہید کو بتایا گیا تھا کہ اپنی موومنٹ سے پہلے آگاہ رکھیں، ان کے ساتھ ان کی اپنی سیکیورٹی بہت ہوتی تھی۔سراج رئیسانی بہت نڈر اور دلیر آدمی تھے،سانحہ مستونگ انتہائی افسوسناک تھا جبکہ 2013کے مقابلے میں بلوچستان کی صورت حال قدرے بہتر ہے۔واضح رہے کہ چیئرمین تحریک انصاف عمران خان جب ووٹ کاسٹ کرنے کیلئے پولنگ سٹیشن پہنچے تھے تو انہوں نے سب کے سامنے بیلٹ پیپر پر مہر لگائی تھی ۔دوسری جانب ایک اور خبر کے مطابق سینئر صحافی اور معروف تجزیہ کار حامد میر آج پولنگ کے دوران سامنے آنے والے دھاندلی پر چیخ اٹھے ۔نجی نیوز چینل جیو نیوز کی الیکشن ٹرانسمیشن کے دوران تجزیہ کار ارشد بھٹی نے کہا کہ کچھ لوگ دھاندلی سے متعلق دائمی بد گمانی کا شکار ہیں اور وہ ماضی کی طرح اس بار بھی دھاندلی کے الزام لگا رہے ہیں جس پر حامد میر بھڑک اٹھے اور کہا کہ صبح سے سن رہے ہیں کہ بلوچستان سے اچھی خبریں نہیں آرہیں ،بلیدہ سے خبر آئی کہ پولنگ اسٹیشن کے اندر سے بیلٹ باکس اٹھا کے بھاگ گئے ،تربت سے بھی ایسی ہی خبر آئی اور دیگر علاقوں سے بھی خبر یں آرہ ہیں ۔ان کا کہنا تھا کہ بلوچستان حساس صوبہ ہے ،احتیاط کی ضرورت تھی لیکن احتیاط کا مظاہرہ نہیں ہوا ۔حامد میر نے کہا کہ کل بلوچستان کی پارٹیاں ایک ہی بات کریں گی جسے بتانے کی ضرورت نہیں ہے سب جانتے ہیں ۔ان کا کہنا تھا کہ 2008اور 2013میں بھی ایسے ہی دھاندلی ہوئی ،یہ کوئی دائمی بد گمانی نہیں بلکہ نا اہلی کا مسئلہ ہے

عمران خان کی تقریر نے چاہنے والوں کو آبدیدہ کر دیا

Tags
پاکستان تحریک انصاف کے چئیرمین عمران خان نے آج الیکشن میں جیت کے بعد قوم سے خطاب کیا۔۔عمران خان کی تقریر کو پاکستانی میڈیا کے ساتھ انٹرنیشنل میڈیا پر بھی لائیو دکھایا گیا،،عمران خان کی تقریر پر ان کے چاہنے والوں نے جذباتی رد عمل دیا ہے۔۔عمران خان نے سیاست میں بہت زیادہ جدوجہد کی ہے۔اس لمبے عرصے میں عمران خان پر کئی قسم کے الزامات بھی لگائے گئے لیکن ان تمام تر الزمات کے باجود بھی عمران خان نے الیکشن 2018ء میں واضح اکثریت میں کامیابی حاصل کی ہے۔ جس کے بعد عمران خان نے قوم سے خطاب کیا۔۔عمران خان کی تقریر پر سوشل میڈیا صارفین نے بھی اپنے رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ انہوں نے آج کے دن کے لیے بہت انتظار کیا۔ ایک سوشل میڈیا صارف کا کہنا تھا کہ مجھے پہلی بار لگ رہا کہ ایک وزیراعظم پاکستان انسان کی زبان بول رہا ہے۔کتنا اچھا اور مناسب الفاظ کا استعمال کیا گیا ہے۔ ایک سوشل میڈیا صار ف کا کہنا ہے کہ میں عمران خان کی تقریر سنتے ہوئے میں اپنے انسوؤں پر قابو نہیں رکھ سکا۔ ایک سوشل میڈیا صارف کا کہنا تھا کہ عمران خان پرچی کے ساتھ نہیں آئے بلکہ وہ ایک منتخب وزیراعظم ہوں گے جنھوں نے کئی پاکستانیوں کے دل جیتے ہیں۔ ایک صارف نے عمران خان کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ شکر ہے ہمیں ایسا وزیراعظم ملا ہے جو لکھی ہوئی تقریر نہیں کر رہا ہے۔ ایک صارف کا کہنا ہے کہ میں بہت زیادہ جذباتی وہ رہی ہوں۔ یہ سب ایک خواب کی طرح ہے۔۔عمران خان بطور وزیراعظم ؟ میں بہت زیادہ خوش ہوں۔ ایک صارف نے کہا کہ طویل عرصے بعد ایک لیڈر پرچی کے بغیر اپنی قوم سے خطاب کر رہا ہے۔ یاد رہے عمران خان نے آج الیکشن 2018ء میں جیت کے بعد عمران خان نے پہلی بار قوم سے خطاب کیا

جدہ: پاکستان میں انتخابات کے بعد سعودی ریال کی قیمت خرید میں معمولی کمی

Tags
آج کے روز پاکستان میں الیکشن نتائج سامنے آ جائیں گے ۔ الیکشن کے انعقاد کے بعد سے سعودی ریال کی قیمت میں معمولی کمی واقع ہوئی اور قیمت 33.90 رہی۔ اسی طرح ڈالر کی قیمت میں بھی معمولی کمی واقع ہوئی اور قیمت خرید 129.35ریکارڈ کی گئی ہے۔ ۔ اسی طرح قیمت فروخت 130.35رہی۔ واضح رہے کہ منگل کو قیمت خرید 129.50تھی۔ اسی طرح اماراتی درہم کی قیمت کم ہوکر 34.75رہی۔واضح رہے کہ پاکستان کی معیشت گزشہ چند مہینوں کے دوران دگرگوں صورتِ حال سے دو چار ہے۔ پاکستان کی اسٹاک ایکسچینج میں بھی مندی کا رحجان دیکھا جا رہا ہے۔ سیاسی عدم استحکام کے باعث پاکستان کی معیشت مسلسل زوال کی جانب گامزن رہی ہے۔روپیہ اپنی قدر کھوتا جا رہا ہے۔ گزشتہ ایک ہفتے کے دوران روپیے کی قدر میں بہت زیادہ مندی دیکھی گئی جس کے باعث غیر مْلکی کرنسیوں کی قدر میں ہوش رْبا اضافہ ہو گیا ہے۔ گزشتہ سوموار کے روز سعودی ریال کی قیمت خرید 34.20 پر جا پہنچی تھی جبکہ قیمت فروخت 34.40 تھی۔ امریکی ڈالر بھی مْلکی تاریخ کی بلند ترین سطح پر پہنچ چکا ہے۔ اوپن مارکیٹ میں امریکی ڈالر 131.50 روپے تک فروخت ہو تا رہا ہے جبکہ اس کی قیمتِ خرید 130.50کو چھو رہی تھی جس میں آج کے روز کمی آئی ہے۔ اماراتی درہم بھی 35 روپے کی بلند ترین قدر کو پہنچ کر اب کچھ نیچے آیا ہے۔ روپیے کی قیمت میں مسلسل کمی پر پاکستانی معیشت دان بہت پریشان ہیں۔ اْن کا کہنا ہے کہ آنے والی گورنمنٹ کو معیشت کے شعبے میں ان گِنت مسائل کا سامنا کرنا پڑے گا۔ گِرتی معیشت کو سنبھالا دینے کی غرض سے ہنگامی نوعیت کے کچھ غیر مقبول فیصلے بھی لینا پڑیں گے جس کے باعث عوامی حلقوں اور اپوزیشن کی جانب سے بھرپور احتجاج کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔ اس لحاظ سے اگلی حکومت کے لیے اقتدار عشرت کدے سے زیادہ کانٹوں کی سیج ثابت ہو گا۔ عالمی مالیاتی اداروں کی جانب سے قرضوں کی وصولی کو یقینی بنانے کے لیے پاکستانی حکام پر ٹیکسز میں مزید اضافے کا مطالبہ کیا جا رہا ہے۔ نگران حکومت نے معیشت کی خراب صورتِ حال سے نبرد آزما ہونے کی غرض سے ہی ایک ماہ کے اندر دو بار پٹرول کی قیمتوں میں اضافہ کیا۔ اگر چہ عدالتی مداخلت پر چند روپے کی کمی بھی کی گئی مگر پھر بھی اس اضافے پر عوام بلبلا اْٹھے ہیں۔ معاشی ماہرین کا خیال ہے کہ اگر موجودہ معاشی صورتِ حال میں بہتری واقع نہ ہوئی تو پھر روپیہ اپنی قدر مزید کھو بیٹھے گا جس کے باعث قرضوں کی غیر مْلکی کرنسی میں واپسی کے عمل میں شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے

Wednesday, July 25, 2018

”سنی لیونی واحد بھارتی نہیں جنہوں نے فحش فلموں میں کام کیا بلکہ۔۔۔“ ایسی 10 بھارتی لڑکیاں منظرعام پر آ گئیں جنہوں نے بیرون ملک جا کر فحش فلموں میں اداکاری شروع کی، تفصیلات جان کر آپ کی حیرت کی انتہاءنہ رہے گی

Tags
TAGS سنی لیونی بھارتی نژاد کینیڈین شہری ہیں جنہوں نے فحش فلموں میں اداکاری کے ذریعے شہرت کمائی اور پھر واپس بھارت آ کر بالی ووڈ میں اپنے حسن کے جلوے بکھیرے۔ آج وہ بھارت کی معروف اداکاراﺅں میں شریک ہوتی ہیں اور دنیا بھر میں ان کے کروڑوں مداح موجود ہیں۔ یہ بھی پڑھیں۔۔۔”فخرزمان کا اب پاکستانی ٹیم کیلئے کوئی فائدہ باقی نہیں رہا کیونکہ۔۔۔“ عامر سہیل نے اوپننگ بیٹسمین کے بارے میں انتہائی تشویشناک بات کہہ دی لیکن آپ کو یہ جان کر حیرت ہو گی کہ سنی لیونی واحد بھارتی خاتون نہیں ہیں جنہوں نے فحش فلموں میں اداکاری بلکہ ان کے علاوہ بھی کئی لڑکیوں نے اس پیشے کو چنا اور شہرت حاصل کی۔ پریا انجلی ضرور پڑھیں:عمران خان ووٹ ڈال کر نکلے تو انہوں نے اپنی گاڑی میں کونسا معروف ترین گانا اونچی آواز میں لگا لیا؟ یہ کوئی پی ٹی آئی کا ترانہ نہیں تھا بلکہ۔۔۔ جواب آپ سوچ بھی نہیں سکتے ضرور پڑھیں:تمام سابق کرکٹرز عمران خان کو سپورٹ کر رہے ہیں لیکن یونس خان نے ایسی جماعت کو سپورٹ کرنے کا فیصلہ کر لیا کہ عمران خان بھی حیران رہ جائیں گے پریا انجلی نئی دہلی میں پیدا ہوئیں جنہیں 2 سال کی عمر میں امریکی جوڑے نے گود لے لیا اور منی سوٹا لے گئے جہاں ان کی پرورش ہوئی۔ انہوں نے ایری زونا یونیورسٹی سے مارکیٹنگ کی تعلیم حاصل کی جس کے بعد فحش فلموں میں اداکاری کا فیصلہ کیا اور 29 سال کی عمر میں 2007ءمیں پہلی فلم میں نظر آئیں۔ تاہم بعد ازاں انہوں نے اپنی انفرادی زندگی اور دیگر معاملات پر توجہ دینے کیلئے انڈسٹری کو خیرباد کہہ دیا۔ انجلی کارا انجلی کارا بھی بھارت میں پیدا ہوئیں اور 2003ءمیں فحش فلموں کی دنیا میں قدم رکھتے ہیں شہرت کی بلندیوں پر پہنچ گئیں۔ انہوں نے 2007ءتک فحش فلموں میں اداکاری کی اور پھر انڈسٹری کو چھوڑ دیا، آج کل وہ انگلینڈ میں مقیم ہیں۔ لی جے لی جے ویسے تو برطانوی کاﺅنٹی سرے کے علاقے کروئیڈن میں پیدا ہوئیں مگر ان کے والدین بھارتی ہیں۔ انہوں نے 21 سال کی عمر میں فحش فلموں کی دنیا میں قدم رکھا اور اب بھی کام جاری رکھے ہوئے ہیں۔ جیڈ جیول جیڈ جیول بھارتی شہر حیدرآباد میں پیدا ہوئیں اور آٹھ سال کے بعد انگلینڈ منتقل ہو گئیں اور پھر امریکہ چلی گئیں۔ کہتے ہیں کہ جب وہ نوجوان لڑکی تھیں تو بہت قدامت پسند تھیں مگر 1997ءمیں انہوں نے اپنی فحش ویب سائٹ بنا لی اور اس وقت ان کی عمر صرف 21 سال تھی۔ ڈیسٹینی ڈیویل ڈیسٹینی ڈیویل بھی بھارتی ہیں جبکہ ان کا اصل نام سبینا تھا لیکن انگلینڈ میں فحش فلموں کی انڈسٹری میں قسمت آزمائی شروع کرتے وقت انہوں نے نام بدل لیا۔ ڈیسٹینی ڈیویل نے صرف 19 سال کی عمر میں ہی فحش فلموں میں اداکاری شروع کر دی تھی۔ آریانا مسٹری آریانا مسٹری بھی بھارتی ہیں اور انہیں بھارتی فحش فلموں کی اداکارہ انجلی کارا نے فحش فلموں کی انڈسٹری میں متعارف کرایا۔ جیسمین چوہدری جیسمین چوہدری بھارت میں پیدا ہوئیں اور بھارت میں ہی فحش فلموں میں اداکاری شروع کر دی۔ وہ ملک میں بننے والی فلموں میں اداکاری کرتی ہیں۔ مادھوری پاٹیل جیسا کہ نام سے ہی ظاہر ہے کہ مادھوری پاٹیل بھی بھارتی ہیں اور فحش فلموں کی دنیا میں کافی شہرت رکھتی ہیں۔ شازیہ سہاری شازیہ سہاری بھی بھارتی ہیں جنہوں نے 2011ءمیں صرف 27 سال کی عمر میں فحش فلموں میں اداکاری شروع کر دی تھی۔ وہ اب تک کئی فلموں میں کام کر چکی ہیں۔ راکھی راکھی بھی بھارتی ہیں لیکن اب امریکہ میں رہتی ہیں اور اپنی ذاتی فحش ویب سائٹ چلاتی ہیں

سب سے پہلے نتا ئج آگئے ، تحریک انصاف کی حیران کن کارکردگی

Tags
پی ایس 3 جیکب آباد میں تحریک انصاف کے عبدالرزاق 300 ووٹ لے کر آگے ہیں اور میر ممتاز حسین جن کا تعلق پیپلز پارٹی سے ہے انہوں نے 30 ووٹ لیے، اس طرح تحریک انصاف کے عبدالرزاق پولنگ سٹیشن قادر پور سے تین سو ووٹ لے کر آگے ہیں۔ پی ایس 2 جیکب آباد میں تحریک انصاف کے طاہر حسین کھوسو 180 اور پیپلز پارٹی کے سہراب خان سرکی نے 30 ووٹ حاصل کیے اس طرح یہاں بھی تحریک انصاف کے امیدوار آگے ہیں۔ دوسری جانب بونیر میں این اے 9 سے تحریک انصاف کے امیدوار برتری لیے ہوئے ہیں، تحریک انصاف کے شیر اکبر خان 79 ووٹ لے کر آگے، عوامی ورکر پارٹی کے فانونس گجر 76 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر ہیں

عام انتخابات 2018کا پہلا غیر حتمی غیر سرکاری نتیجہ آگیا ، کونسی جماعت آگے نکل گئی ؟

Tags
پی ایس 3جیکب آبادمیں قادر پورپولنگ اسٹیشنز کے نتیجے کا اعلان کردیاگیا ہے،،پی ٹی آئی کے امیدوار عبدالرزاق آگے اور میرممتاز پیچھے ہیں۔غیرحتمی اور غیرسرکاری نتائج کے مطابق پی ٹی آئی کے عبدالرزاق 300ووٹ لیکر آگے جبکہ پیپلزپارٹی کے میر ممتاز 30ووٹ لیکر پیچھے ہیں۔ واضح رہے آج ملک بھر کے قومی اور صوبائی اسمبلیوں کے حلقوں میں انتخابات 2018ء کیلئے پولنگ ہوئی۔پولنگ کا عمل صبح 8 سے بجے سے بغیر کسی وقفے شام 6 بجے تک جاری رہا۔ بعض علاقوں میں گرمی حبس رہا اوربعض مقامات پربارش بھی ہوئی۔ ووٹ ڈالنے کیلئے لوگوں کا پولنگ اسٹیشنز پر رش رہا۔ لیکن پولنگ کا عمل انتہائی سست رو رہنے کی شکایات بھی موصول ہوئیں۔ لڑائی جھگڑوں اور فائرنگ کے واقعات بھی پیش آئے۔کوئٹہ مشرقی بائی پاس پردہشتگردی کا انتہائی افسوسناک واقعہ پیش آیا۔جس میں 29 افراد جاں بحق اور متعدد زخمی ہوگئے۔ تاہم ان تمام واقعات کے باوجود پولنگ کا عمل جاری رہا۔عام انتخابات2018ء میں قومی اسمبلی کے 272 میں سے 270 حلقوں پر جبکہ صوبائی اسمبلیوں کے577 میں سے570 حلقوں پرالیکشن ہوا۔ قومی اسمبلی کیلئے سبزبیلٹ پیپر اورصوبائی اسمبلی کیلئے سفید بیلٹ پیپرز استعمال کیے گئے۔ سیکرٹری الیکشن کمیشن کا کہنا ہے کہ الیکشن کمیشن کے پاس120 پارٹیاں رجسٹرڈ ہیں۔ایک ہزار623 امیدوار آزاد حیثیت سے الیکشن لڑ رہے ہیں۔ الیکشن کمشین کے اعلان کے مطابق الیکشن میں 16لاکھ کےقریب انتخابی عملہ خدمات سرانجام دیے۔ جن میں 85 ہزار307 پریزائیڈنگ افسران، 5 لاکھ 10 ہزار 356 اسسٹنٹ پریزائیڈنگ افسران، 42 لاکھ 55 ہزار 178 پولنگ افسران خدمات انجام دیں گے۔ 131ڈی آر اوز، 840 سے زیادہ آراوزسرانجام دیے۔ الیکشن میں سکیورٹی کیلئے4 لاکھ 49 ہزار 465 پولیس اہلکار،3 لاکھ 70 ہزار سے زیادہ فوجی جوان تعینات ہوئے۔ قومی و صوبائی اسمبلیوں کے 8 حلقوں پر انتخابات ملتوی کیے گئے

ووٹنگ تو 6بجے ختم ہو گئی مگر آج پاکستان میں 7بجے کیا کام ہونے جا رہا ہے ؟ طاقت وار ادارے نے اہم احکامات جاری کردیے

Tags
ووٹنگ تو 6بجے ختم ہو گئی مگر آج پاکستان میں 7بجے کیا کام ہونے جا رہا ہے ؟ پاکستانیوں کیلئے سب سے بڑی خبر ۔ تازہ ترین اطلاعات کے مطابق ووٹنگ کا سلسلہ اپنے اختتام کو پہنچا تاہم الیکشن کمیشن پاکستان کے حکم کے مطابق تما م ٹی وی چینلز نتائج 7بجے نشر کریں گے ۔ اس سے پہلے نتائج بتانے کی کسی چینل کو اجازت نہیں ہے
loading...
۔

بریکنگ نیوز ! سعودی عرب میں وہ پیشے جنہیں تبدیل نہیں کرایا جاسکتا

Tags
وزارت محنت و سماجی بہبود نے واضح کیا ہے کہ ڈاکٹر اور انجینیئرکے پیشوں کا اندراج آن لائن نہیں ہو گا بلکہ سابقہ پیشہ تبدیل کرانے کی خاطر، ڈاکٹر یا انجینیئر کا پیشہ درج کرانے کیلئے مکتب العمل سے رجوع کرنا ہوگا۔ مطلوبہ اسناد اور دستاویزات بھی پیشہ میں ترمیم کیلئے پیش کرنا ہوگی۔وزارت محنت نے پیشے میں ترمیم کا طریقہ کار واضح کرتے ہوئے توجہ دلائی کہ سب سے پہلے متعلقہ ادارے کے آن لائن اکاﺅنٹ پر جانا ہو گا۔ وہاں "پیشے میں تبدیلی(تغییر المھنہ) سروس طلب کرنا ہوگی، اس کے بعد ہویہ المقیم غیر ملکی کے شناختی کارڈ کا نمبر درج کرنا ہوگا۔ پھر مطلوبہ پیشے کی نشاندہی کرنا ہو گی۔ اس کے بعد مطلوبہ پیشے والا بٹن دبا کر درخواست بھیجنا ہو گی۔ عکاظ اخبار نے اس کی تفصیلات دیتے ہوئے بتایا کہ وزارت محنت کی ویب سائٹ پر متعدد پیشوں کی نشاندہی کر دی گئی ہے۔ ان میں سینما سے متعلق پیشے (پروڈکشن ڈائریکٹر، فوٹو گرافر، فلمی فوٹو گرامر، فلمی ہدایتکار،ریڈیائی ہدایتکار اور شو مشین آپریٹر قابل ذکر ہیں۔ وزارت محنت نے ایسے پیشوں اور اسامیوں کی بھی نشاندہی کر دی ہے جن کی 100فیصد سعودائزیشن کا فیصلہ ہو چکا ہے۔ مثال کے طور پر زیورات فروش، ٹورسٹ گائیڈ اور موبائل فروش کے پیشے قابل ذکر ہیں۔ اقتصادی مشیر عبداللہ الیحیٰ نے بتایا کہ غیر ملکیوں کو پیشوں میں تبدیلی کی دوبارہ اجازت دینے کا فیصلہ لیبر مارکیٹ کیلئے مفید ثابت ہو گا۔ تقریباً ایک برس سے اس پر پابندی تھی اس سے مارکیٹ میں اصلاحات آئیں گی۔ انہوں نے بتایا کہ انجینئر ، ڈاکٹرز اور چارٹرڈ اکاﺅنٹنٹ جیسے پیشے درج کرانے کیلئے دستاویزات اور اسناد پیش کرنا ہوں گی۔ انہوں نے یہ بھی بتایا کہ درخواست دینے کے ایک ہفتے بعد وزارت پیشے میں تبدیلی کی منظوری یا نامنظوری کے بارے میں آگاہ کرے گی
loading...

”سنی لیونی واحد بھارتی نہیں جنہوں نے فحش فلموں میں کام کیا بلکہ۔۔۔“ ایسی 10 بھارتی لڑکیاں منظرعام پر آ گئیں جنہوں نے بیرون ملک جا کر فحش فلموں میں اداکاری شروع کی، تفصیلات جان کر آپ کی حیرت کی انتہاءنہ رہے گی

Tags
سنی لیونی بھارتی نژاد کینیڈین شہری ہیں جنہوں نے فحش فلموں میں اداکاری کے ذریعے شہرت کمائی اور پھر واپس بھارت آ کر بالی ووڈ میں اپنے حسن کے جلوے بکھیرے۔ آج وہ بھارت کی معروف اداکاراﺅں میں شریک ہوتی ہیں اور دنیا بھر میں ان کے کروڑوں مداح موجود ہیں۔ یہ بھی پڑھیں۔۔۔”فخرزمان کا اب پاکستانی ٹیم کیلئے کوئی فائدہ باقی نہیں رہا کیونکہ۔۔۔“ عامر سہیل نے اوپننگ بیٹسمین کے بارے میں انتہائی تشویشناک بات کہہ دی لیکن آپ کو یہ جان کر حیرت ہو گی کہ سنی لیونی واحد بھارتی خاتون نہیں ہیں جنہوں نے فحش فلموں میں اداکاری بلکہ ان کے علاوہ بھی کئی لڑکیوں نے اس پیشے کو چنا اور شہرت حاصل کی۔ پریا انجلی ضرور پڑھیں:عمران خان ووٹ ڈال کر نکلے تو انہوں نے اپنی گاڑی میں کونسا معروف ترین گانا اونچی آواز میں لگا لیا؟ یہ کوئی پی ٹی آئی کا ترانہ نہیں تھا بلکہ۔۔۔ جواب آپ سوچ بھی نہیں سکتے ضرور پڑھیں:تمام سابق کرکٹرز عمران خان کو سپورٹ کر رہے ہیں لیکن یونس خان نے ایسی جماعت کو سپورٹ کرنے کا فیصلہ کر لیا کہ عمران خان بھی حیران رہ جائیں گے پریا انجلی نئی دہلی میں پیدا ہوئیں جنہیں 2 سال کی عمر میں امریکی جوڑے نے گود لے لیا اور منی سوٹا لے گئے جہاں ان کی پرورش ہوئی۔ انہوں نے ایری زونا یونیورسٹی سے مارکیٹنگ کی تعلیم حاصل کی جس کے بعد فحش فلموں میں اداکاری کا فیصلہ کیا اور 29 سال کی عمر میں 2007ءمیں پہلی فلم میں نظر آئیں۔ تاہم بعد ازاں انہوں نے اپنی انفرادی زندگی اور دیگر معاملات پر توجہ دینے کیلئے انڈسٹری کو خیرباد کہہ دیا۔ انجلی کارا انجلی کارا بھی بھارت میں پیدا ہوئیں اور 2003ءمیں فحش فلموں کی دنیا میں قدم رکھتے ہیں شہرت کی بلندیوں پر پہنچ گئیں۔ انہوں نے 2007ءتک فحش فلموں میں اداکاری کی اور پھر انڈسٹری کو چھوڑ دیا، آج کل وہ انگلینڈ میں مقیم ہیں۔ لی جے لی جے ویسے تو برطانوی کاﺅنٹی سرے کے علاقے کروئیڈن میں پیدا ہوئیں مگر ان کے والدین بھارتی ہیں۔ انہوں نے 21 سال کی عمر میں فحش فلموں کی دنیا میں قدم رکھا اور اب بھی کام جاری رکھے ہوئے ہیں۔ جیڈ جیول جیڈ جیول بھارتی شہر حیدرآباد میں پیدا ہوئیں اور آٹھ سال کے بعد انگلینڈ منتقل ہو گئیں اور پھر امریکہ چلی گئیں۔ کہتے ہیں کہ جب وہ نوجوان لڑکی تھیں تو بہت قدامت پسند تھیں مگر 1997ءمیں انہوں نے اپنی فحش ویب سائٹ بنا لی اور اس وقت ان کی عمر صرف 21 سال تھی۔ ڈیسٹینی ڈیویل ڈیسٹینی ڈیویل بھی بھارتی ہیں جبکہ ان کا اصل نام سبینا تھا لیکن انگلینڈ میں فحش فلموں کی انڈسٹری میں قسمت آزمائی شروع کرتے وقت انہوں نے نام بدل لیا۔ ڈیسٹینی ڈیویل نے صرف 19 سال کی عمر میں ہی فحش فلموں میں اداکاری شروع کر دی تھی۔ آریانا مسٹری آریانا مسٹری بھی بھارتی ہیں اور انہیں بھارتی فحش فلموں کی اداکارہ انجلی کارا نے فحش فلموں کی انڈسٹری میں متعارف کرایا۔ جیسمین چوہدری جیسمین چوہدری بھارت میں پیدا ہوئیں اور بھارت میں ہی فحش فلموں میں اداکاری شروع کر دی۔ وہ ملک میں بننے والی فلموں میں اداکاری کرتی ہیں۔ مادھوری پاٹیل جیسا کہ نام سے ہی ظاہر ہے کہ مادھوری پاٹیل بھی بھارتی ہیں اور فحش فلموں کی دنیا میں کافی شہرت رکھتی ہیں۔ شازیہ سہاری شازیہ سہاری بھی بھارتی ہیں جنہوں نے 2011ءمیں صرف 27 سال کی عمر میں فحش فلموں میں اداکاری شروع کر دی تھی۔ وہ اب تک کئی فلموں میں کام کر چکی ہیں۔ راکھی راکھی بھی بھارتی ہیں لیکن اب امریکہ میں رہتی ہیں اور اپنی ذاتی فحش ویب سائٹ چلاتی ہیں

وزیر اعظم عمران خان؟ تحریک انصاف کے سربراہ کو انتخابی نتائج آنے سے قبل ہی وی وی آئی پی سیکورٹی فراہم کردی گئی

Tags
وزیر اعظم عمران خان؟ تحریک انصاف کے سربراہ کو انتخابی نتائج آنے سے قبل ہی وی وی آئی پی سیکورٹی فراہم کردی گئی، تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان کو وزارت داخلہ کی جانب سے بنی گالہ میں وی وی آئی پی سیکورٹی فراہم کی گئی ہے، سیکورٹی فراہم کرنے کی وجہ سیکورٹی خدشات بتائی جا رہی ہے۔ تفصیلات کے مطابق پاکستان میں ہونے والے دسویں عام انتخابات کے سلسلے میں جاری پولنگ کا وقت ختم ہونے والا ہے۔ تاہم پولنگ کا وقت ختم ہونے اور پولنگ نتائج آنے سے قبل ہی اب وزارت داخلہ کی جانب سے اہم فیصلہ لیا گیا ہے۔ وزارت داخلہ نے تحریک انصاف کے سربراہ کو انتخابی نتائج آنے سے قبل ہی وی وی آئی پی سیکورٹی فراہم کردی ہے۔ تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان کو وزارت داخلہ کی جانب سے بنی گالہ میں وی وی آئی پی سیکورٹی فراہم کی گئی ہے۔ وزارت داخلہ جانب سے سیکورٹی فراہم کرنے کی وجہ سیکورٹی خدشات بتائی جا رہی ہے۔ یہ بات واضح رہے کہ وی وی آئی پی سیکورٹی عمومی طور پر سربراہان مملکت کو فراہم کی جاتی ہے۔ واضح رہے آج ملک بھر کے قومی اور صوبائی حلقوں میں انتخابات 2018ء کیلئے پولنگ کا عمل جاری ہے۔پولنگ کا عمل صبح 8سے بجے سے شروع ہوا اورشام 6بجے تک پولنگ جاری رہے گی۔تاہم گرمی اور حبس کے باوجود لوگ ووٹ ڈالنے کیلئے باہر نکل پڑے ہیں۔ الیکشن عمل کے دوران کوئٹہ میں دہشتگردی کا واقعہ پیش آیا۔ اسی طرح لاڑکانہ میں کریکر دھماکہ ہوا۔بعض مقامات پرلڑاجھگڑے کے واقعات ہوئے۔ قومی اسمبلی کے 272 میں سے 270 حلقوں پر جبکہ صوبائی اسمبلیوں کے577 میں سے570 حلقوں پرالیکشن کا عمل جاری ہے۔ قومی اسمبلی کیلئے سبزبیلٹ پیپر اورصوبائی اسمبلی کیلئے سفید بیلٹ پیپرز ہیں۔ الیکشن کمیشن نے بتایا کہ ووٹ ڈالنے کیلئے اصل شناختی کارڈ پولنگ اسٹیشن لےکرجائیں۔ سیکرٹری الیکشن کمیشن کا کہنا ہے کہ الیکشن کمیشن کے پاس120 پارٹیاں رجسٹرڈ ہیں۔ ایک ہزار623 امیدوار آزاد حیثیت سے الیکشن لڑ رہے ہیں

بھارت : مذہب کی آڑ میں 90لڑکیوں سے بد اخلاقی کا ملزم جلیبی بابا گرفتار

Tags
بھارتی ریاست ہریانہ میں 120لڑکیوں سے بد اخلاقی کرنے اور غیر اخلاقی ویڈیوز بنانے والے مجرم جلیبی بابا کو گرفتار کر لیا گیا، جلیبی بابا گزشتہ20سال سے مذہب کی آڑ میں زیادتی اوربلیک میلنگ کی دکان چلا رہا تھا۔ بھارتی میڈیا کے مطابق بھارتی ریاست ہریانہ کے ٹوہانہ علاقے سے پولیس نے ایسے بابا کو گرفتار کیا جس پر90سے زیادہ خواتین سے زیادتی اور 120سے زائد غیر اخلاقی وڈیوزریکارڈ کرنے کا الزام ہے۔بابا گزشتہ20سال سے مذہب کی آڑ میں زیادتی اوربلیک میلنگ کی دکان چلا رہا تھا۔گزشتہ دنوں ایک خاتون نے بابا امرپوری پربد اخلاقی کا الزام لگاتے ہوئے ٹوہانہ پولیس اسٹیشن میں شکایت درج کرائی تھی جس پر کارروائی کرتے ہوئے پولیس نے جیل بھیج دیا تھالیکن غیر اخلاقی وڈیو بنانیوالے ماہر بابا نے ایسا جال بچھایا کہ کچھ دنوں بعد خود خاتون ہی شک کے دائرے میں آگئی۔ بابا کی کارندہ خاتون نے الٹا متاثرہ خاتون کو ہی بابا کیخلاف درج شکایت کوواپس لینے کے عوض روپے وصول کرتے ہوئے رنگے ہاتھوں پکڑوادیا۔ اس کے بعد بابا ضمانت پر رہا ہوگیا۔جلیبی بابا کا دعوی ہے کہ وہ چٹکیوں میں ہر پریشانی دور کردیتا ہے۔ جب بھی کوئی پریشان حال خاتون یا لڑکی اس کے جھانسے میں آجاتی دھوکے سے لڑکی یا اس کے ہمراہ آنے والے شخص کو نشہ آور اشیا پلادیتااور لڑکی پر آسیب و سایہ ہونے کی بات بتادیا کرتا

’’عمران خان صرف ایک کھلاڑی ہیں جو۔۔۔‘‘ الیکشن والے دن فاطمہ بھٹو بھی میدان میں آ گئیں، عمران خان پر بڑا حملہ کر دیا

Tags
انتخابی مہم میں تو سیاسی مخالفین ایک دوسرے پر تابڑتوڑ حملے کرتے رہے لیکن آج عین انتخابات کے روز ذوالفقار علی بھٹو کی پوتی فاطمہ بھٹو میدان میں آ گئی ہیں اور تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان پر بڑا حملہ کر دیا ہے۔ دی گارڈین کے لیے لکھے گئے آرٹیکل میں فاطمہ بھٹو نے کہا ہے کہ پاکستان کا انتخابی اکھاڑا ایک مکمل سرکس بن چکا ہے جہاں ماہر رنگ ماسٹرز سے لے کر پنجرے میں قید شیروں، چاقو سے نشانے لگانے والے اور رسوں پر کرتب دکھانے والوں تک سب کچھ موجود ہے اور عمران خان ’رنگ ماسٹرز‘کے سجائے اس سرکس کا محض ایک کھلاڑی ہے جو انہی کے اشاروں پر ناچ رہا ہے۔عمران خان کے متعلق خیال کیا جا رہا ہے کہ وہ طاقتور ’رنگ ماسٹرز‘ کی پشت پناہی کے باعث جیت کے بہت قریب پہنچ چکا ہے۔ عمران خان اس سرکس کا وہ کھلاڑی ہے جس کا پورا سیاسی کیریئر موقع پرستی اور رنگ ماسٹرز کی فرمانبرداری سے معمور ہے۔عمران خان کا سیاسی ریکارڈ دیکھا جائے تو اس نے ہر وہ کام کیا ہے جو ’رنگ ماسٹرز‘ کو رام کرنے کے لیے کیا جا سکتا تھا۔ ان کی جماعت تحریک انصاف اپنا تشخص اینٹی کرپشن پارٹی کے طور پر پیش کرتی ہے لیکن حقیقت یہ ہے کہ الیکشن جیتنے کے لیے انہوں نے پیپلزپارٹی اور مسلم لیگ ن کے کرپٹ ترین افراد کو بھی اپنی پارٹی میں شامل کر لیا ہے، حتیٰ کہ شدت پسندوں کو بھی، جن میں فضل الرحمان خلیل بھی شامل ہیں جنہوں نے مبینہ طور پر ایک شدت پسند تنظیم حرکت المجاہدین کی بنیاد رکھی تھی۔وہ مبینہ طور پر اسامہ بن لادن کے بھی معاون کار رہے اور ان کا نام آج بھی امریکہ کی ’ٹیرر واچ لسٹ‘ میں شامل ہے۔ ان تمام عوامل کے ساتھ اس انتخابی مہم میں پاکستان تحریک انصاف ’ظلم‘ کا عنصر بھی لے کر آئی ہے۔ عمران خان نے ایک جلسے میں مسلم لیگ ن کے ورکرز کو گدھا کہااور بظاہر اس سے متاثر ہو کر کراچی میں پی ٹی آئی کے ورکرز نے ایک بے زبان گدھے کو کھمبے سے باندھ کر وحشیانہ تشدد کا نشانہ بنایا۔ انہوں نے گدھے کے منہ پر اس قدر لاتیں اور گھونسے مارے کہ اس کے جبڑے ٹوٹ گئے اور نتھنے پھٹ گئے۔ جب گدھا بے ہوش ہو کر گر گیا تو انہوں نے اس کے اوپر سے گاڑی گزار دی اور پھر اس کے جسم پر ’’نواز‘‘ لکھ کر چلے گئے۔ اس گدھے کو جانوروں کو ریسکیو کرنے والی نجی آرگنائزیشن اے سی ایف کی ٹیم نے اٹھایا اور اس کا علاج شروع کیا تاہم اگلے روز گدھا شدید زخموں کی وجہ سے مر گیا۔یوں پی ٹی آئی ورکرز نے اپنی تفریح طبع کے لیے ایک بے زبان جانور کو بہیمانہ ظلم کرکے موت کے گھاٹ اتار دیا۔اس سے اگلے ہی روز کراچی میں ہی ایک اور گدھے کو اس سے بھی زیادہ ظلم کا نشانہ بنایا گیا۔ اس بار اس گدھے کے منہ سے کھال تک نوچ لی گئی اور اس کے ماتھے پر گوشت کو چیر پھاڑ ڈالا گیا۔ اس گدھے کے ساتھ یہ سلوک کس نے کیا؟ اس حوالے سے اے سی ایف کو بھی کچھ معلوم نہیں کہ آیا پی ٹی آئی کے ورکرز نے ہی اپنے لیڈر سے متاثر ہو کر یہ ظالمانہ کام بھی کیا یا کسی اور نے۔ کچھ روز قبل سرگودھا میں پی ٹی آئی کے ورکرز نے ایک ریلی میں دو ریچھوں کے ساتھ بھی ایسا ہی کچھ سلوک کیا تھا۔ اگر جانوروں پر ظلم کرکے انہیں موت کے گھاٹ اتارنا ہی تحریک انصاف کا اجتماعی رویہ ہے تو یہ الیکشن جیتنے کے بعد کیا کرے گی؟ کسی شخص کی سوچ کا اندازہ اس بات سے لگایا جاتا ہے کہ وہ اپنے سے کمزور شخص کے ساتھ کیسا سلوک کرتا ہے۔ اس تناظر میں دیکھا جائے تو عمران خان تو صرف طاقتوروں کے آگے ہی جھکنے کے عادی ہیں

کھلے عام ووٹ کاسٹ کرنے کا معاملہ ،عمران خان کو کیا سزا مل سکتی ہے؟ ایسی خبرآگئی کہ کپتان بھی پریشان ہوجائیں گے

Tags
پاکستان الیکشن کمیشن نے انتخابی ضابطہ اخلاق کی پاسداری نہ کرنے پر تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان سے وضاحت طلب کر تے ہو ئے جواب مانگا ہے۔ تفصیلات کے مطابق الیکشن کمیشن نے ووٹ ڈالنے کے بعد میڈیا ٹاک کا نوٹس لیتے ہوئے فوری جواب طلب کیا ہے جبکہ نوٹس میں مزید پوچھاگیا ہے کہ پابندی کے باوجود عمران خان نے میڈیا سے گفتگو کیوں کی اور ووٹ کی رازداری کا خیال کیوں نہیں رکھا ؟۔ الیکشن کمیشن کا کہنا ہے کہ ووٹ کی رزداری پامال کرنے کی سزا 6ماہ قیداورایک ہزارروپے جرمانہ ہے، الیکشن ایکٹ کی خلاف ورزی پر کارروائی ہو سکتی ہے اورعمران خان کا ووٹ کینسل بھی ہو سکتا ہے۔ عمران خان نے ووٹ پر سب کے سامنے مہر لگا کراورمیڈیاٹاک کے ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کی،الیکشن کمیشن نے کہا کہ میڈیا سے براہ راست بات چیت انتخابی ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی ہے

الیکشن کمیشن نےایک گھنٹہ وقت بڑھانے کا مطالبہ مسترد کردیا

Tags
: الیکشن کمیشن آف پاکستان نے پولنگ کاایک گھنٹہ وقت نہ بڑھا نے کا فیصلہ کرلیا،اب پولنگ کا وقت 6بجے تک ہی رہیگا، تاہم الیکشن کمیشن نے انتخابی عملے کوپولنگ کا تیز کرنے کی بھی ہدایت کردی ہے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق ملک بھر میں آج عام انتخابات 2018ء کیلئے پولنگ کا عمل صبح 8بجے سے جاری ہے۔تاہم پولنگ اسٹیشنزپرگرمی اور حبس جبکہ بعض مقامات پربارش کے باعث اور انتخابی عملے کی رفتار سست ہونے کے باعث ٹرن آؤٹ تاحال کم ہے۔ جس کے باعث مسلم لیگ ن ، پیپلزپارٹی ، عوامی مسلم لیگ نے الیکشن کمیشن سے پولنگ اسٹیشنز پرایک گھنٹہ وقت بڑھانے کا مطالبہ کردیا ۔ مسلم لیگ ن نے چیف الیکشن کمشنر کوبھی خط لکھا کہ پولنگ کاوقت ایک گھنٹہ بڑھا دیا جائے۔ مسلم لیگ ن نے تین مطالبے کئے کہ ووٹ کا ایک گھنٹہ وقت بڑھایاجائے۔عملہ کوہدایت کی جائے کہ رفتار تیز کی جائے۔جولوگ موجود ہیں ان کووقت کے بعد بھی ووٹ ڈالنے دیا جائے۔ مشاہد حسین سید نے کہا کہ ہمارا ووٹرباہر نکلا ہے ہرجگہ ہمارا ووٹر موجود ہے ان کوووٹ ڈالنے کا موقع دیا جائے۔اسی طرح عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید نے بھی پولنگ کاوقت بڑھانے کی التجا کی۔انہوں نے کہا کہ چیف الیکشن کمشنر انتخابی عملے کورفتار بڑھانے کی ہدایت کریں،وقت بڑھانے سے ٹرن آؤٹ بڑھ جائے گا۔انہوں نے کہا کہ اللہ کا واسطہ دیتا ہوں کہ الیکشن روز روز نہیں آتا، قوم پراحسان کریں وقت بڑھا دیاجائے۔ پولنگ اسٹیشنز پرسینکڑوں نہیں ہزاروں لوگ موجود ہیں۔اسی طرح پیپلزپارٹی نے بھی پولنگ کا وقت بڑھانے کامطالبہ کیا تھا۔دوسری جانب الیکشن کمیشن آف پاکستان نے تمام جماعتوں کے مطالبے پرغور کرتے ہوئے مشاورت کی اور پولنگ کا وقت نہ بڑھانے کا فیصلہ کرلیا۔ واضح رہے آج ملک بھر کے قومی اور صوبائی حلقوں میں انتخابات 2018ء کیلئے پولنگ کا عمل جاری ہے۔ پولنگ کا عمل صبح 8سے بجے سے شروع ہوا اورشام 6بجے تک پولنگ جاری رہے گی۔تاہم گرمی اور حبس کے باوجود لوگ ووٹ ڈالنے کیلئے باہر نکل پڑے ہیں۔ الیکشن عمل کے دوران کوئٹہ میں دہشتگردی کا واقعہ پیش آیا۔اسی طرح لاڑکانہ میں کریکر دھماکہ ہوا۔بعض مقامات پرلڑاجھگڑے کے واقعات ہوئے۔ قومی اسمبلی کے 272 میں سے 270 حلقوں پر جبکہ صوبائی اسمبلیوں کے577 میں سے570 حلقوں پرالیکشن کا عمل جاری ہے۔ قومی اسمبلی کیلئے سبزبیلٹ پیپر اورصوبائی اسمبلی کیلئے سفید بیلٹ پیپرز ہیں۔ الیکشن کمیشن نے بتایا کہ ووٹ ڈالنے کیلئے اصل شناختی کارڈ پولنگ اسٹیشن لےکرجائیں۔ سیکرٹری الیکشن کمیشن کا کہنا ہے کہ الیکشن کمیشن کے پاس120 پارٹیاں رجسٹرڈ ہیں۔ ایک ہزار623 امیدوار آزاد حیثیت سے الیکشن لڑ رہے ہیں

آرمی ووٹرز پر دباؤ ڈال رہی ہے ، انتظامات سے خوش نہیں ہیں

Tags
عام انتخابات 2018ء کے تحت آج ملک بھر میں پولنگ کا سلسلہ صبح 8 بجے سے جاری ہے جو شام 6 بجے تک بغیر کسی وقفے کے جاری رہے گا۔اس موقع پر ملک بھر کے پولنگ اسٹیشنز سے مختلف قسم کی شکایات موصول ہو رہی ہیں لیکن لودھراں میں مسلم لیگ ن کے اُمیدوار صدیق خان بلوچ نے پاک فوج کے اہلکاروں پر الزام عائد کر دیا ۔ این اے 161 سے لیگی اُمیدوار صدیق خان بلوچ نے کہا کہ آرمی ووٹرز پر دباؤ ڈال رہی ہے، ہم انتظامات سے خوش نہیں ہیں۔ میڈیا سے بات کرتے ہوئے صدیق خان بلوچ کا کہنا تھا کہ آرمی مکمل طور پر ہمارے ووٹرز پر دباؤ ڈال رہی ہے اور انہیں اپنے پریشر میں لانے کی کوشش کر رہی ہے۔ خیال رہے کہ این اے 161 سے مسلم لیگ ن کے اُمیدوار خان محمد صدیق بلوچ ہیں جنہوں نے پاک فوج کے اہلکاروں پر ووٹرز کو دباؤ میں لانے کا الزام عائد کیا ہے۔ جبکہ ان کا مقابلہ پی ٹی آئی اُمیدوار میاں محمد شفیق کے ساتھ ہیں جو ان کو ممکنہ طور پر ٹف ٹائم دے سکتے ہیں۔ اس حلقے میں رجسٹرڈ ووٹوں کی تعداد 456927 ہے جن میں 252094 مرد اور 204833 خواتین شامل ہیں۔یاد رہے کہ آج ملک بھر سے آج 10 کروڑ 59 لاکھ 55 ہزار 409 ووٹرز حق رائے دہی استعمال کریں گے۔کسی بھی نا خوشگوار واقعے سے نمٹنے کے لیے سکیورٹی کے بھی انتہائی سخت انتظامات کیے گئے ہیں۔ پولنگ اسٹیشن کے اندر اور باہر پاک فوج کے جوان تعینات ہیں۔ ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن ججز ریٹرننگ افسران کی ذمہ داریاں نبھائیں گے جب کہ پاک فوج کے افسران کو مجسٹریٹ کے اختیارات بھی دیے گئے ہیں۔ یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کہ پاکستان میں مسلسل چوتھی آئینی حکومت کے قیام کے لیے آج 25 جولائی کو عام انتخابات ہو رہے ہیں۔ یہ پاکستان کی تاریخ کے گیارہویں انتخابات ہیں۔۔این اے 161 سے مسلم لیگ ن کے اُمیدوار خان محمد صدیق بلوچ کا پاک فوج کے اہلکاروں پر ووٹرز کو دباؤ میں لانے کا الزام آپ بھی

دُبئی:پولیس اہلکار کی ٹھُکائی کرنے والا بھارتی شہری جیل پہنچ گیا

Tags
ایک پولیس اہلکار کو مارنے پیٹنے اوراُس کی سرکاری گاڑی کو نقصان پہنچانے کے الزام میں 53 سالہ بھارتی شہری کو چھ ماہ کی سزا سُنا دی گئی۔ تفصیلات کے مطابق الکرما کے علاقے میں معمول کی ڈیوٹی پر تعینات پولیس سارجنٹ نے ایک بھارتی ڈرائیور کو خستہ حال کار چلاتے دیکھا تو اُسے گاڑی روکنے کا اشارہ کیا۔ گاڑی کے رُکنے پر مذکورہ بھارتی شہری کے کاغذات چیک کیے گئے تو پتا چلا کہ یہ شخص پولیس کو کئی معاملات میں مطلوب ہے۔ پولیس والے نے اُسے گرفتار کرنا چاہا تو اُس نے بہانہ کیا کہ وہ پہلے پارکنگ میٹر پر جا کر اپنی گاڑی کا پارکنگ ٹکٹ وصول کر لے پھر واپس آ کر گرفتاری دے دے گا۔ لیکن وہ پارکنگ ٹکٹ لینے کی بجائے وہاں سے بھاگ کھڑا ہوا۔ سارجنٹ نے ملزم کا پیچھا کر کے اُسے پکڑ لیا تو اُس نے پہلے تو سارجنٹ کو مارا پیٹا اور پھر دھکا دے کر زمین پر گِرا دیا۔ جس پر سارجنٹ کا ایک ہاتھ زخمی ہو گیا تاہم وہ ہمت سے کام لیتے ہوئے اُٹھ کھڑا ہوا اور ملزم کو ہتھکڑی لگا کر گرفتار کر لیا۔ جب وہ ملزم کو پولیس کار میں بٹھانے لگا تو اُس نے دوبارہ مزاحمت کا مظاہرہ کیا اور پھر سے بھاگنے کی کوشش کی جس دوران گاڑی کا دروازہ پچک گیا۔ عدالت نے ملزم کو پولیس اہلکار کی مار پیٹ کرنے اور گاڑی کے دروازے کو ٹکر مار کر 1,316اماراتی درہم کا نقصان پہنچانے کا مجرم قرار دے دیا۔ مجرم کو چھ ماہ قید کے علاوہ 1,316 درہم کا جرمانہ بھی ادا کرنا ہو گا۔ جبکہ سزا کی مُدت پُوری ہوتے ہی اُسے ڈی پورٹ کر دیا جائے گا۔ ملزم نے عدالت میں اپنی بے گناہی ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ اُس نے سارجنٹ کو دھکا نہیں دیا بلکہ وہ اُس کا تعاقب کرنے کے دوان خود ہی گِر گیا تھا جس کے باعث اُسے ہاتھ پر چوٹ آئی۔ جبکہ کار میں بٹھاتے وقت سارجنٹ نے اُسے دروازے کی طرف دھکا دیا جس کے باعث دروازے کو ضرب لگی۔ ملزم کو فیصلے کے خلاف پندرہ دِن کے اندر اپیل کا حق دیا گیا ہے

” عمران خان تجھے اللہ پوچھے گا، تمہاری وجہ سے میں نے آج اس شخص کو ووٹ ڈالا ہے “ عمران خان کے سپورٹر نے ایسی بات کہہ دی کہ ن لیگیوں کی بھی ہنسی نہ رکے گی

Tags
تحریک انصاف کی جانب سے این اے 245 کراچی میں متنازعہ اینکر پرسن عامر لیاقت حسین کو ٹکٹ جاری کیا گیا ہے۔ پاکستانیوں کی ایک بڑی تعداد عامر لیاقت کو ان کے متنازعہ طرز عمل کی وجہ سے پسند نہیں کرتی یہی وجہ ہے کہ جب انہیں پی ٹی آئی کا ٹکٹ جاری ہوا تو اس کی شدید مخالفت کی گئی تاہم اب پارٹی کے نظریاتی کارکن انہیں ووٹ بھی دے رہے ہیں اور شکوے شکایات بھی کر رہے ہیں۔ پی ٹی آئی کے نظریاتی کارکنوں میں عبدالباسط بھی شامل ہیں جو آغا خان یونیورسٹی میں فنانس منیجر کے عہدہے پر فائز ہیں ۔ انہوں نے پی ٹی آئی کو عامر لیاقت حسین کی وجہ سے انتہائی بوجھل دل کے ساتھ اپنا ووٹ دیا ۔انہوں نے فیس بک پر لکھا ” میں نے انتہائی بوجھل دل کے ساتھ ووٹ دیا، عمران خان تم سے اللہ پوچھے گا (اور مجھ سے بھی) کیونکہ تم نے مجھے مجبور کیا کہ میں عامر لیاقت حسین کو ووٹ دوں“۔ عبدالباسط نے مزید کہا کہ وہ اس وقت کے بارے میں سوچ رہے ہیں جب عامر لیاقت الیکشن جیت جائے گا اور ہنستے ہوئے کہے گا ’ ہاں بھائی ، کیسا دیا‘۔ ضرور پڑھیں:تمام سابق کرکٹرز عمران خان کو سپورٹ کر رہے ہیں لیکن یونس خان نے ایسی جماعت کو سپورٹ کرنے کا فیصلہ کر لیا کہ عمران خان بھی حیران رہ جائیں گے راحیل ملٹھانی نے کہا کہ وہ اسی وجہ سے ووٹ کاسٹ نہیں کریں گے ، وہ پی ٹی آئی کو ووٹ کاسٹ کرنا چاہتے تھے لیکن عامر لیاقت کی وجہ سے ایسا نہیں کر رہے ۔راحیل ملٹھانی کی بات پر عبدالباسط نے کہا کہ برائے مہربانی ووٹ ضرور کرو، اگر عامر لیاقت کو ووٹ نہیں دینا چاہتے تو بائیکاٹ بھی نہ کرو کیونکہ پی ٹی آئی نے صوبائی اسمبلی پر اچھے امیدوار کو ٹکٹ جاری کیا ہے، قومی اسمبلی پر کسی اور کو ووٹ دے دو۔ ضرور پڑھیں:عمران خان ووٹ ڈال کر نکلے تو انہوں نے اپنی گاڑی میں کونسا معروف ترین گانا اونچی آواز میں لگا لیا؟ یہ کوئی پی ٹی آئی کا ترانہ نہیں تھا بلکہ۔۔۔ جواب آپ سوچ بھی نہیں سکتے محمد کامران نے کہا کہ آپ نے تو ضمیر کا سودا کردیا جس پر عبدالباسط نے کہا کہ انہوں نے ایسا ملک کے ’ وسیع تر مفاد‘ میں کیا ہے۔

سعودی عرب:حج پرمٹ کی عدم موجودگی میں حج کی کوشش بہت بھاری پڑے گی

Tags
سعودی مملکت کے پاسپورٹ جنرل ڈیپارٹمنٹ نے خبردار کیا ہے کہ حج پرمٹ کی غیر موجودگی میں سعودی سرزمین پر قدم رکھنے والے عازمینِ حج مشکل میں پڑ جائیں گے۔ کیونکہ حج پرمٹ کے بغیر مناسکِ حج کی ادائیگی غیر قانونی ہے۔ ایسی کوشش کے مرتکب افراد کو چھ ماہ قید کی سزا سُنائی جائے گی جبکہ پچاس ہزار سعودی ریال کا جرمانہ بھی بھُگتنا ہو گا۔ اس حوالے سے ایک اعلیٰ سعودی عہدے دار میجر جنرل نائف بن سلطان الرُویس نے مملکت میں مقیم تمام مقامی اور غیر مُلکی افراد کوبھی متنبہ کیا ہے کہ وہ حج سے متعلقہ ضوابط کی پابندی کریں۔ بصورت دیگر ان ضوابط کی خلاف ورزی کے مرتکب افراد کے خلاف سخت کارروائی عمل میں لائی جائے گی

فیصل آباد کے علاقہ جڑانوالہ سے شناختی کارڈ سے بھرا ہوا تھیلا برآمد

Tags
عام انتخابات 2018ء میں دھاندلی کا آغاز ہو گیا ۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق فیصل آباد کے حلقہ این اے 102 کے علاقہ جڑانوالہ سے شناختی کارڈز سے بھرا ہوا تھیلا برآمد ہو گیا ۔ پولیس کا کہنا ہے کہ تھیلے میں شناختی کارڈز موجود تھے۔ تھیلے میں موجود تمام شناختی کارڈز سے ووٹ کاسٹ کیا جا چکا ہے۔ پولیس کے بیان کے بعد فیصل آباد کے علاقہ جڑانوالہ میں موجود سیاسی کارکنان نے شدید تحفظات کا اظہار کیا۔ فیصل آباد کے حلقہ این اے 102 سے پاکستان تحریک انصاف کے رہنما نواب شیرو سیر اور مسلم لیگ ن کے رہنما طلال چوہدری کے مابین کانٹے دار مقابلہ ہے۔ گذشتہ روز این اے 125کے علاقے شفیق آباد میں ایک نالے سے سیکڑوں کی تعداد میں شناختی کارڈ برآمد ہوئے ۔ پولیس نے شناختی کارڈ تحویل میں لے کر تفتیش کا آغاز کردیا تھا جبکہ الیکشن سے ایک روز قبل شناختی کارڈ کے برآمد ہونے نے الیکشن کی شفافیت پر سوالات اُٹھادئے ہیں۔ شناختی کارڈز اصلی ہیں یا نکلی اس سے تاحال کوئی اطلاع موصول نہیں ہوئی۔ اس سے قبل پی ٹی آئی رہنما ابرار الحق نے بھی دھاندلی کا انکشاف کیا تھا۔ پی ٹی آئی رہنما ابرار الحق نے مسلم لیگ ن کے رہنما احسن اقبال پر دھاندلی کا الزام عائد کیا۔ ابرارالحق نے کہا کہ پریذائیڈنگ افسر سے شیر کی مہر والے بیلٹ پیپرز پکڑے گئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ فوج نے بروقت پہنچ کر دھاندلی کا پہلا لیگی منصوبہ ناکام بنا دیا ہے۔ اپنے ویڈیو پیغام میں ابرار الحق نے کہا کہ مجھے افسوس کے ساتھ یہ کہنا پڑ رہا ہے کہ نارروال میں جعلی ارسطو صاحب یعنی احسن اقبال نے دھاندلی کا منصوبہ تیار کر رکھا تھا۔ انبھی تھوڑی دیر قبل بدوچیدہ ایک گاؤں ہے وہاں کی پریزائیڈنگ افسر صاحبہ کے پاس شیر کی مہر والے بیلٹ پیپرز کی پانچ کاپیاں موجود تھیں، لیکن اللہ کا شکر ہے کہ وہ بیلٹ پیپرز پکڑے گئے ہیں۔ ابرارالحق نے کہا کہ پولیس ان کو چھُڑوانے کی کوشش کر رہی ہے اور ن لیگ کے وائس چئیرمین کے ڈیرے پر موجود ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ یہ افسوس کی بات ہے کہ ایسا ہو رہا ہے کیونکہ یہ الیکشن صاف و شفاف ہونا چاہئیے تھا۔ لیکن الیکشن کی شفافیت کو یقینی نہیں بنایا جا رہا ،یہ سراسر ناقابل قبول ہے، ان افسران کو تبدیل ہونا چاہئیے کیونکہ ہم 2013ء کی طرز پر الیکشن نہیں کروانا چاہتے۔ 2013ء میں یہ اطلاعات تھیں کہ پریزائیڈنگ افسران کو خرید لیا گیا ہے، پولیس خرید لی گئی ہے انتظامیہ خرید لی گئی ہے۔ اپنی ویڈیو میں ابرارالحق نے اس معاملے پر سخت ایکشن لینے اور کارروائی کرنےکا مطالبہ کیا

این اے 53 سے(ق) لیگ کے رہنما عمران خان کے حق میں دستبردار

Tags
پاکستان مسلم لیگ (ق) کے راہنما اور این اے 53 سے امیدوار ناصر منیر احمدچوہدری شجاعت حسین کی ہدایت پر عمران خان کے حق میں دستبردار ہو گئے ،پاکستان مسلم لیگ کے چیف آف پرٹوکول، جیپ کے نشان پر انتخابات میں حصہ لے رہے تھے ۔مسلم لیگ اور تحریک انصاف کے انتخابی اتحاد کے بعد پاکستان مسلم لیگ (ق) کے راہنما اور این اے 53 سے امیدوار ناصر منیر احمدعمران خان کے حق میں دستبرادر ہو گئے، اس سے قبل مسلم لیگ ق کے صدر اور سابقہ امیدوار رضوان صادق نے بھی پارٹی ہدایت پر اسد عمر کی حمایت کر چکے ہیں،ناصر منیر احمد نے کہا ہے کہ عمران خان کی کامیابی کے لیے تمام ووٹر ، سپورٹر بھرپور حصہ لیں، تحریک انصاف کی کامیابی ملک دوست قوتوں کی کامیابی ہو گی ۔ ناصر منیر احمد اسلام آباد ۔ کرپشن کے خلاف جنگ میں ہم عمران خان کے سنگ ہیں۔ دستبردار

وہ اہم ترین حلقہ جہاں پریذائیڈنگ افسر کیساتھ بیٹھ کر ٹھپے لگائے جارہے ہیں، تہلکہ خیز خبرآگئی

Tags
)ملک بھر میں عام انتخابات کیلئے پولنگ کا عمل جاری ہے جبکہ کوئٹہ سے انتہائی تشویشنا ک خبر بھی آئی جہاں خود کش حملے میں 31 افراد شہید ہو گئے ہیں تاہم دوسری جانب سینئر صحافی طلعت حسین نے این اے 53 میں پولنگ کے حوالے سے انتہائی خوفناک انکشاف کر دیاہے ۔ نجی ٹی وی جیونیوز کے خصوصی پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے سینئر صحافی طلعت حسین نے انکشاف کیاہے کہ این اے 53 سے انتہائی سنجیدہ شکایات آر ہی ہیں جہاں سے عمران خان کے مخالف شاہد خاقان عباسی میدان میں ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ اس حقلے سے مبصر نے شکایت بھیجی ہے کہ پولنگ سٹیشن میں پریذائڈنگ افسر کے پاس ایک بندہ بیٹھاہے اور وہ ٹھپے پر ٹھپے لگا رہاہے جبکہ اس موقع پر ہمارا ایک مبصر بھی موجود ہے جو کہ اسے مسلسل منع کر رہاہے لیکن وہ رکنے کا نام نہیں لے رہاہے ، مبصر کا کہناہے کہ ہم نے یہ ریکارڈ کر لیاہے، اس جگہ پر ووٹرز کا ٹرن آوٹ کم ہے جبکہ بیلٹ باکسز ووٹوں سے بھرے ہوئے ہیں۔ طلعت حسین کا کہناتھا کہ الیکشن کمیشن اگر ہمیں سن رہاہے تو فوری طور پر اس کا نوٹس لے

ریاض: غیر مُلکیوں کے لیے پیشے کی تبدیلی کے حوالے سے اہم خبر

Tags
سعودی وزارت محنت و سماجی بہبود نے واضح کیا ہے کہ ایسے پیشے جن کی 100فیصد سعودائزیشن کا فیصلہ ہو چکا ہے اُن کے لیے غیر مُلکیوں کی جانب سے پیشے کی تبدیلی کی درخواست رد کر دی جائے گی۔ مثلًا زیورات فروشی‘ ٹورسٹ گائیڈ‘ موبائل فروشی اور اس طرح کے سعودیوں کے لیے مخصوص پیشوں کے لیے غیر مُلکی درخواست دینے کے اہل نہیں ہیں۔ ڈاکٹری‘ انجینئرنگ اور چارٹرڈ اکاؤنٹنٹ کے پیشوں کے لیے آن لائن درخواست کی سہولت موجود نہیں ہے۔ جبکہ جو غیر مُلکی ورکر اپنے سابقہ پیشے کو چھوڑ کر اُس کی جگہ ڈاکٹر‘ انجینئر یا چارٹرڈ اکاؤنٹنٹ کا پیشہ اختیار کرنا چاہتے ہیں‘ اُنہیں اس کے لیے مکتب العمل سے رجوع کرنا ہو گا۔ اگر کوئی شخص ڈاکٹری کا پیشہ اپنانا چاہ رہا ہے تو اُسے اپنی طبی دستاویزات و اسناد مکتب العمل میں جمع کروانا ہو گی جو سعودی ہیلتھ اسپیشلائزیشن کونسل کے ذریعے مطلوبہ شخص کی طبی اہلیت کا جائزہ لینے کے بعد فیصلہ کرے گی کہ کیا یہ شخص میڈیکل کے شعبے میں خدمات انجام دینے کا اہل ہے یا نہیں۔ اسی طرح انجینئر کے عہدے کو اختیار کرنے کے لیے سعودی انجینئرز کونسل جبکہ چارٹرڈ اکاؤنٹنٹ کے لیے سعودی چارٹرڈ اکاؤنٹس کونسل حتمی فیصلہ دے گی۔ اگر متعلقہ پیشے کے لیے سعودی افراد موجود ہوں تو پھر ایسی درخواست پر غور نہیں کیا جائے گا۔ پیشے میں ترمیم کے خواہش مند پہلے متعلقہ ادارے کے آن لائن اکاؤنٹ پر جا کر وہاں "پیشے میں تبدیلی(تغییر المھنہ)پر کلِک کریں گے‘، اس کے بعدوہ اپنے سعودی شناختی کارڈ نمبر کا اندراج کریں گے۔ جس کے بعد مطلوبہ پیشے کی نشاندہی کرنا ہو گی۔ اس کے بعد مطلوبہ پیشے والا بٹن دبا کر درخواست بھیجنا ہو گی۔ وزارت محنت کی ویب سائٹ پر جن پیشوں کو اختیار کرنا ممکن ہے اُن میں سینما سے متعلق پیشے مثلاًفلمی فوٹوگرافر‘ فوٹوگرافر‘ فلم ڈائریکٹر‘ پروڈکشن ڈائریکٹر‘ ریڈیو ڈائریکٹر وغیرہ قابلِ ذکر ہیں۔ وزارت کے ترجمان کے مطابق اس سہولت کے باعث سعودی لیبر مارکیٹ میں استحکام آئے گا اور یہ پہلے سے زیادہ منظم بنیادوں پر کام کرے گی۔ جس کے باعث معیشت میں مزید ترقی واقع ہو گی

عام انتخابات 2018ء ، گذشتہ روز وفات پانے والے شخص کا ووٹ کاسٹ ہو گیا

Tags
جہلم میں گذشتہ روز وفاق پانےو الے شخص کا ووٹ کاسٹ کر دیا گیا۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق جہلم کے رہائشی شخص کی وفات کے بعد بھی اس کا ووٹ کاسٹ ہو گیا۔ اسرار منیر ولد احمد سعید محلہ رشید آباد کا رہائشی تھا۔ اسرار منیر کا ووٹ پولنگ اسٹیشن 98 مارکیٹ کمیٹی دفتر جہلم میں کاسٹ کیا گیا۔جس کےبعد ایک تشویش کی لہر دوڑ گئی کہ وفات پانے والے شخص کا ووٹ آکر کس نے کاسٹ کیا۔ اسرار منیر کا ووٹ کاسٹ ہونے پر دھاندلی کا شُبہ بھی پیدا ہوگیا ہے جس پر سیاسی کارکنان نے احتجاج کرنا بھی شروع کردیا ہے۔ سیاسی کارکنان کا کہنا ہے کہ اگر فوت ہوجانے والے شخص کا ووٹ کاسٹ ہو گیا ہے تو اس بات کا اندازہ لگایا جا سکتا ہے کہ ان انتخابات میں کس قسم کی دھاندلی کی جا رہی ہے۔ واضح رہے کہ آج عام انتخابات 2018ء کے لیے ملک بھر میں پولنگ کا عمل جاری ہے۔ ملک بھر سے آج 10 کروڑ 59 لاکھ 55 ہزار 409 ووٹرز حق رائے دہی استعمال کریں گے۔ انتخابات کے لیے دو لاکھ 44 ہزار 687 پولنگ بوتھ قائم کیے گئے ہیں جن میں سے 20 ہزار 789 پولنگ اسٹیشنزکو حساس قراردیا گیا ہے۔انتخابات میں مجموعی طور پر 16 لاکھ کا عملہ فرائض انجام دے رہا ہے۔ فوج کے تین لاکھ 71 ہزار اور پولیس کے چار لاکھ 49 ہزار 465 اہلکارسیکیورٹی کے فرائض انجام دیں گے۔ خواتین کے علاوہ سیکیورٹی اہلکار اور دیگر عملہ پولنگ اسٹیشنز پر پہنچ چکا ہے۔ 85 ہزار 307 پریزائیڈنگ افسر، پانچ لاکھ دس ہزار 356 اسسٹنٹ پریزائیڈنگ افسر، دو لاکھ 55 ہزار 178 پولنگ افسر، 131 ڈسٹرکٹ ریٹرننگ افسر اور ڈی آر اوز اور آر اوز کی مجموعی تعداد دو ہزار 720 ہے۔کسی بھی نا خوشگوار واقعے سے نمٹنے کے لیے سکیورٹی کے بھی انتہائی سخت انتظامات کیے گئے ہیں۔ پولنگ اسٹیشن کے اندر اور باہر پاک فوج کے جوان بھی تعینات ہیں

رانا ثناء اللہ کے آبائی حلقے میں ن لیگی حامیوں نے پی ٹی آئی کارکن کا بازو توڑ دیا

Tags
سابق وزیر قانون پنجاب رانا ثناء اللہ کے حامی زبردستی پولنگ اسٹیشن میں گھس گئے۔ تشدد سے پی ٹی آئی کے کارکن کا بازو ٹوٹ گیا۔میڈیا رپورٹس کے مطابق پی پی 133 میں رانا ثناء اللہ کے آبائی حلقے میں لیگی کارکنان زبردستی پولنگ اسٹیشن میں گھسنے کی کوشش کی۔جب پی ٹی آئی کے حامیوں نے لیگی کارکنان کو پولنگ اسٹیشن میں جانے سے منع کیا تو لیگی حامیوں نے تحریک انصاف کے حامیوں کو تشدد کا نشانہ بنایا۔ اور پی ٹی آئی کارکنان کے ساتھ جگھڑا کیا۔ن لیگی کے حامیوں کی طرف سے تشدد کے بعد تحریک انصاف کے ایک کارکن ایک بازو ٹوٹ گیا۔یاد رہے آج ملک بھر میں عام انتخابات کا انعقاد ہو رہا ہے۔ پانچ سال بعد عوامی فیصلے کا وقت آگیا،۔ کون حکومت بنائے گا ، کون اپوزیشن میں جائے گا۔صبح 8 بجے شروع ہونے والی پولنگ بلاتعطل شام 6 بجے تک جاری رہے گی۔آج قومی اسمبلی کی 270 اور صوبائی اسمبلیوں کی 570 نشستوں کے لیےووٹ ڈالے جارہے ہیں۔ اور لوگ بھی اپنے پسندیدہ امیدوار کو ووٹ ڈالنے کے لیے گھروں سے نکل پڑے ہیں۔ الیکشن 2018ء میں 10کروڑ 59لاکھ سے زائد ووٹر حق رائے دہی استعمال کریں گے ۔ آج یعنی پولنگ کے روز موبائل فون پولنگ اسٹیشن کے اندر لے جانے پر پابندی ہے، صحافی بھی پولنگ اسٹیشن کے اندر موبائل فون نہیں لے جاسکتے ، ویڈیو کیمرے کے ذریعے پولنگ اسٹیشن کے اندر کی ویڈیو بناسکیں گے۔ یاد رہے قومی اسمبلی کے 2 اور صوبائی اسمبلی کے 6 حلقوں پرالیکشن ملتوی کردیے گئے ہیں جبکہ پی ایس 6 کشمور سے میر شبیر بجارانی بلامقابلہ منتخب ہوچکے ہیں۔اب تک کئی سیاسی رہنما اپنے حلقوں میں ووٹ کاسٹ کر چکے ہیں۔جن میں پاکستان تحریک انصاف کے چئیرمین عمران خان،،، ن لیگ صدر شہباز شریف،،، چئیرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو،،، خواجہ آصف سمیت کئی سیاسی رہنما شامل ہیں۔جب کہ چیف جسٹس آف پاکستان میاں ثاقب نثار نے بھی اپنا ووٹ کاسٹ کر لیا ہے۔۔۔چیف جسٹس نے لاہور کے حلقہ این اے 130میں اپنا ووٹ کاسٹ کیا۔

سابق آرمی چیف جنرل راحیل شریف نے بھی قومی فریضہ انجام دے دیا

Tags
سابق آرمی چیف جنرل راحیل شریف نے بھی ووٹ ڈال کر اپنا قومی فریضہ انجام دے دیا۔ تفصیلات کے مطابق آج ملک بھر میں عام انتخابات 2018ء کے تحت صبح 8 بجے سے پولنگ کا عمل شروع ہو چکا ہے جو شام 6 بجے تک بلا تعطل جاری رہے گا۔ عام انتخابات میں اپنا حصہ ڈالنے کے لیے پی ٹی آئی چئیرمین عمران خان ، مسلم لیگ ن کے صدر شہباز شریف،، اسپیکر قومی اسمبلی ایاز صادق ، سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی سمیت ملک کے سیاسی رہنماؤں اور چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس ثاقب نثار نے بھی اپنا ووٹ کاسٹ کیا۔ تاہم اب سابق آرمی چیف جنرل راحیل شریف نے بھی عام انتخابات 2018ء کے تحت اپنا ووٹ کاسٹ کر دیا ہے۔ ووٹ کاسٹ کرنے کے لیے سابق آرمی چیف جنرل راحیل شریف بغیر پروٹوکول پولنگ اسٹیشن کے اندر داخل ہوئے اور ووٹرز کی قطار میں لگ کر اپنی باری کا انتظار کیا۔ سابق آرمی چیف جنرل راحیل شریف نے لاہور میں اپنا ووٹ کاسٹ کیا۔سابق آرمی چیف جنرل راحیل شریف کے ووٹ کاسٹ کرنے کی خصوصی تصاویر اُردو پوائنٹ نے حاصل کر لیں۔ ملک کے سیاسی رہنماؤں ، چیف جسٹس اور سابق آرمی چیف کے ووٹ کاسٹ کرنے کی تصاویر کو دیکھتے ہوئے ووٹرز میں حوصلہ پیدا ہوا ہے۔ ووٹرز کا کہنا ہے کہ جب یہ لوگ ووٹ کاسٹ کرنے کا قومی فریضہ انجام دے سکتے ہیں تو پھر عام آدمی کو بھی چاہئیے کہ وہ گھر سے نکل کر ووٹ کاسٹ کرے اور اپنا ووٹ ضائع نہ کرے ۔ کیونکہ ملک کے بڑے لیڈرز اور سیاسی رہنماؤں کا ووٹ کاسٹ کرنا ووٹ کی اہمیت کا منہ بولتا ثبوت ہے۔ واضح رہے کہ عام انتخابات 2018ء کے پیش نظر ملک بھر میں پولنگ کا عمل جاری ہے۔ ملک بھر سے آج 10 کروڑ 59 لاکھ 55 ہزار 409 ووٹرز حق رائے دہی استعمال کریں گے۔آج قومی اسمبلی کے 272 میں سے 270 حلقوں جب کہ صوبائی اسمبلیوں کے 577 میں سے 570 حلقوں کے لیے پولنگ ہو گی جس کے تحت ووٹرز اپنے پسندیدہ اُمیدوار کو ووٹ دیں گے

الیکشن کمیشن کا عمران خان کی ووٹ ڈالنے کے بعد میڈیا ٹاک کا نوٹس

Tags
لیکشن کمیشن آف پاکستان نے تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کی ووٹ ڈالنے کے بعد میڈیا ٹاک کا نوٹس لے لیا۔ الیکشن کمیشن کا کہناتھا کہ عمران خان نے ووٹ پر سب کے سامنے مہر لگا کراورمیڈیاٹاک کرکے ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کی،الیکشن کمیشن نے کہا کہ میڈیا سے براہ راست ٹاک انتخابی ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی ہے،چیئرمین پی ٹی آئی کیخلاف قانون کے مطابق کارروائی ہو گی۔ ضرور پڑھیں:الیکشن ڈیوٹی نبھاتے پاک فوج کے جوانوں کو نشانہ بنا دیا گیا ،شہادتیں واضح رہے کہ تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے این اے 53اسلام آباد میں اپنا ووٹ کاسٹ کیا اور ووٹ کاسٹ کرنے کے بعد میڈیا سے گفتگو کی

عام انتخابات 2018ء میں دھاندلی کا پہلا الزام

Tags
عام انتخابات 2018ء کے لیے ملک بھر میں صبح آٹھ بجے سے پولنگ کا عمل جاری ہے جو شام 6 بجے تک بلا تعطل جاری رہے گا۔ ایک جانب جہاں ملک بھر میں ووٹ کاسٹ کرنے کا سلسلہ جاری ہے وہیں ان انتخابات کے حوالے سے دھاندلی کا پہلا الزام بھی سامنے آ گیا ہے۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق عام انتخابات 2018ء میں دھاندلی سے متعلق پی ٹی آئی کا پہلا الزام سامنے آ گیا ۔ پی ٹی آئی رہنما ابرار الحق نے مسلم لیگ ن کے رہنما احسن اقبال پر دھاندلی کا الزام عائد کیا۔ ابرارالحق نے کہا کہ پریذائیڈنگ افسر سے شیر کی مہر والے بیلٹ پیپرز پکڑے گئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ فوج نے بروقت پہنچ کر دھاندلی کا پہلا لیگی منصوبہ ناکام بنا دیا ہے۔ اپنے ویڈیو پیغام میں ابرار الحق نے کہا کہ مجھے افسوس کے ساتھ یہ کہنا پڑ رہا ہے کہ نارروال میں جعلی ارسطو صاحب یعنی احسن اقبال نے دھاندلی کا منصوبہ تیار کر رکھا تھا۔ انبھی تھوڑی دیر قبل بدوچیدہ ایک گاؤں ہے وہاں کی پریزائیڈنگ افسر صاحبہ کے پاس شیر کی مہر والے بیلٹ پیپرز کی پانچ کاپیاں موجود تھیں، لیکن اللہ کا شکر ہے کہ وہ بیلٹ پیپرز پکڑے گئے ہیں۔ ابرارالحق نے کہا کہ پولیس ان کو چھُڑوانے کی کوشش کر رہی ہے اور ن لیگ کے وائس چئیرمین کے ڈیرے پر موجود ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ یہ افسوس کی بات ہے کہ ایسا ہو رہا ہے کیونکہ یہ الیکشن صاف و شفاف ہونا چاہئیے تھا۔ لیکن الیکشن کی شفافیت کو یقینی نہیں بنایا جا رہا ،یہ سراسر ناقابل قبول ہے، ان افسران کو تبدیل ہونا چاہئیے کیونکہ ہم 2013ء کی طرز پر الیکشن نہیں کروانا چاہتے۔ 2013ء میں یہ اطلاعات تھیں کہ پریزائیڈنگ افسران کو خرید لیا گیا ہے، پولیس خرید لی گئی ہے انتظامیہ خرید لی گئی ہے۔ اپنی ویڈیو میں ابرارالحق نے اس معاملے پر سخت ایکشن لینے اور کارروائی کرنےکا مطالبہ کیا

پاکستان کے نئے وزیراعظم اب عمران خان! برطانوی میڈیا نے پہلے ہی بڑی خبر سنا دی، حیرت انگیز انکشافات

Tags
تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کو بین الاقوامی میڈیا نے انتخابات میں فیورٹ قرار دیا ہے، ایک برطانوی جریدے نے خصوصی مضمون شائع کیا جس میں کہا گیا کہ عمران خان سمجھتے ہیں کہ بڑے مقابلے کے لیے انہوں نے گزشتہ انتخابات کے مقابلے میں تجربہ کار امیدواروں کو میدان میں اتارا ہے اور وہ گڈ گورننس کے حصول کے لیے اداروں کو اپنے پاؤں پر کھڑا کرنے کے خواہاں ہیں، اس کے علاوہ مضمون میں کہا گیا کہ صحت و تعلیم پر سرمایہ کاری کے وعدےنے عوام کو عمران خان کے اور زیادہ قریب کر دیا ہے، برطانوی جریدے کے مضمون کے مطابق عمران خان کے اسلامی فلاحی مملکت کے ایجنڈے نے عوام میں غیر معمولی مقبولیت حاصل کی ہے، مضمون میں مزید کہا گیا کہ تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان ترقی یافتہ اور ترقی پذیر ممالک کے درمیان گڈ گورننس کو بنیادی فرق سمجھتے ہیں، مزید لکھا گیا کہ اس بار عمران خان کا مقابلہ ان کے حریف کے بھائی کے ساتھ ہے اور عمران خان انتخابات کے شفاف انعقاد کے لیے پرامید ہیں

خواجہ آصف ووٹ کاسٹ کرنے سے پہلے بکرے کا صدقہ دیں گے

Tags
خواجہ آصف ووٹ کاسٹ کرنے سے پہلے بکرے کا صدقہ دیں گے۔ تفصیلات کے مطابق انتخابات کا دن آن پہنچا ہے اور ملک بھر میں پولنگ کا عمل شروع ہو چکا ہے۔صبح 8 بجے شروع ہونے والی پولنگ بلاتعطل شام 6 بجے تک جاری رہے گی۔آج قومی اسمبلی کی 270 اور صوبائی اسمبلیوں کی 570 نشستوں کے لیے ووٹ ڈالے جارہے ہیں۔اور لوگ بھی اپنے پسندیدہ امیدوار کو ووٹ ڈالنے کے لیے گھروں سے نکل پڑے ہیں۔ ووٹرز میں انتخابات کے حوالے سے شدید جوش وخروش دیکھنے میں آیا ہے،اب تک مختلف سیاسی رہنما بھی اپنے حلقوں میں ووٹ کاسٹ کر چکے ہیں۔تاہم ن لیگ کے رہبما خواجہ آصف ووٹ کاسٹ کرنے سے پہلے صدقہ دیں گے اور اس کے بعد ووٹ کاسٹ کریں گے۔میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ سیالکوٹ میں خواجہ آصف کی رہائش گاہ پر 5 سفید رنگ کے بکرے پہنچا دئیے گئے ہیں۔ خواجہ آصف نے پولنگ اسٹیشن جانے سے قبل بلائیں ٹالنے کے لیے صدقہ دیا،یاد رہے حقلہ این اے 73سیالکوٹ سے ن لیگ کے خواجہ آصف اور پاکستان تحریک انصاف کے عثمان ڈار مد مقابل ہوں گے۔دونوں امیدواروں میں کانٹا دار مقابلہ ہو گا۔2013ء کے انتخابات میں یہاں سے خواجہ آصف منتخب ہوئے تھے۔یاد رہے آج ملک بھر میں عام انتخابات کا انعقاد ہو رہا ہے۔ پانچ سال بعد عوامی فیصلے کا وقت آگیا،۔ کون حکومت بنائے گا ، کون اپوزیشن میں جائے گا۔۔۔الیکشن 2018ء میں 10کروڑ 59لاکھ سے زائد ووٹر حق رائے دہی استعمال کریں گے ۔ آج یعنی پولنگ کے روز موبائل فون پولنگ اسٹیشن کے اندر لے جانے پر پابندی ہے، صحافی بھی پولنگ اسٹیشن کے اندر موبائل فون نہیں لے جاسکتے ، ویڈیو کیمرے کے ذریعے پولنگ اسٹیشن کے اندر کی ویڈیو بناسکیں گے۔ک میں پرامن انتخابات کے انعقاد کو ممکن بنانے کےلئے پاک فوج بھی پولنگ اسٹیشن پر تعینات ہے۔اور اپنے فرائض سر انجام دے رہی ہے۔ پُرامن ماحول کے لیے دیگر قانون نافذ کرنے والے اداروں اور مقامی انتظامیہ کے درمیان رابطہ ہے

Tuesday, July 24, 2018

قبض، کینسر، شوگراور جلدی امراض سے نجات پائیں پاکستان میں عام سمجھی جانیوالی سبزی یورپ میں اتنی مقبول کیوں ہے؟حیرت انگیز فوائد سامنے آگئے

Tags
عام طور پر چقندر کو ہمارے ہاں سلاد کے طور پر استعمال کیا جاتا ہے مگر آپ یہ جان کر حیران رہ جائیں گے کہ یورپ میں آلوئوں کے بعد چقندر سب سے مقبول ترین سبزی سمجھی جاتی ہے۔ اس کی یورپ میں مقبولیت کی وجہ اس کے بے شمار فوائد ہیں۔ چقندر کھانے سے ذیابیطس اور کینسر کے خلاف مدافعتی قوت بڑھتی ہے ۔ انفیکشن کے خلاف مزاحمتی کردار اد ا کرنےوالا چقندر گوشت کے سالن ، سادہ ترکاری ، سلاد اور رائتے میں استعمال کیا جاتا ہے ۔ اسے کھانے سے ذیابیطس اور کینسر کے خلاف مدافعتی قوت بڑھتی ہے ۔چند برس قبل تک نائٹرک آکسائیڈ سے متعلق تحقیقات سامنے نہیں آئی تھیں چنانچہ غذائی افادیت کا انکشاف نہیں ہوا تھا کہ خون کے خلیے نائٹرک آکسائیڈ بھی رکھتے ہیں اور یہ گیس خون کے خلیوں کو ان کی ضرورت کے مطابق آکسیجن لے جانے میں مددگار ہوتی ہے ۔ قسم کی سبزی اور پھل کے اندر کثیر مقدار میں ایسا مادہ ہوتاہے جو قبض دور کرتا ہے ، سفید چقندرجگر کو تسکین بخشتا ہے ، سیاہ قسم قابض ہوتی ہے البتہ اس کا عرق نکال کے لگانے سے خارش خاص کر جلدی امراض ختم ہوجاتے ہیں جلدکی یہ بیماری پھپھوندی کی وجہ سے ہوتی ہے ۔ چقندر کا عرق پھپھوندی کو ختم کرتا ہے ۔ قدیم طبیب چقندر کے پتوں کا پانی نکال کر اس سے کلی کراتے تھے ۔ سفید چقندرکاپانی جگر کی بیماریوں پر اچھے اثرات ڈالتا ہے ۔چقندر کا تعلق پالک کے خاندان سے ہے البتہ اس کا غذا کے طور پر کھایا جانے والا پسندید حصہ اس کی جڑ ہے ۔ سلاد کے طور پر کھائیے یا اُبال کر یا گوشت کے ساتھ پکائیے ، ہر طرح سے مفید ہے ۔ یورپ میں اس کا پودا 1584میں لایا گیا اوراب یہ وہاں کی غذا اور صنعت میں آلو کے بعد سب سے مقبول سبزی ہے ۔چقندر میں ایک کیمیائی جزو Betinپایاجاتا ہے ، یہ خون بڑھاتاہے ۔ گردوں کی صفائی کرتاہے ۔معدے اور آنتوں میں ہونے والی جلن سے آرام دیتا ہے ۔ سرخ چقند ر سے خواتین کا ماہانہ نظام درست ہوتا ہے

تمام دردوں اور بیماریوں کے لیے شفا

Tags
ایک دفعہ رسول اللهﷺ تشریف فرما تھے اور صحابہ کرام رضوان علیہم اجمعین بھی آپﷺ کے گرد بیٹھے ہوئے تھے ۔نبی کریم ﷺ نے فرمایا کہ اللّه تعالیٰ نے مجھ پر بڑے بڑے احسانات کئے ہیں جو مجھ سے پہلے کسی نبی پر نہیں کئے ۔پھر فرمایا میں بیٹھا ہوا تھا کہ جبرائیل علیہ السلام آئے اور کہا اے محمدﷺ!الله تعالیٰ حکم دیتے ہیں کہ میں نے آپﷺ کے پاس اپنی کتاب بھیجی اور اس کتاب میں ایک سورت ایسی بھیجی ہےکہ اگر وہ سورۃ تورات میں ہوتی تو حضرت موسیٰ علیہ السلام کی امت میں سے کوئی شخص یہود ہوتا ۔ اور اگر یہ سورہ انجیل میں ہوتی تو حضرت عیسیٰ علیہ السلام کی امت میں سے کوئی شخص نصرانی نہ ہوتا ۔اور اگر یہ سورۃ زبور میں ہوتی تو حضرت داؤد علیہ السلام کی امت میں کوئیامت میں کوئی شخص مغ ( بت خانہ کا خادم ) نہ ہوتا ۔یہ سورۃ میں نے قرآن میں اس لیے اتاری ہے کہ آپ کے امتی اس سورہ کی تلاوت کی برکت سے قیامت کے روز دوزخ کے عذاب سے اور قیامت کی ہولناکیوں سے بچ جائیں ۔جبرائیل علیہ السلام نے مزید فرمایا اے محمد ﷺ!اس خدا کی قسم جس نے آپؐ کو تمام کائنات کے لئے برحق نبی بنا کر بھیجا ہے اگر روئے زمین کے تمام سمندر سیاہی بن جائیں اور تمام عالم کے درخت قلم بن جائیں اور سات آسمان اور سات زمینیں کاغذ بن جائیں پھر بھی ابتدائے عالم سے قیامت تک لکھتے رہنے کے باوجود اس سورۃ کی فضیلتیں نہیں لکھی جا سکیں گی۔ یہ سورہ فاتحہ ہے۔ سورۃ فاتحہ تمام دردوں اور بیماریوں کے لیے شفا ہے ۔جو بیماری کسی علاج سے ٹھیک نہ ہوتی ہو تو سورہ فاتحہ کو صبح کے فرضوں اور سنتوں کے درمیان بسم اللہ شریف کے ساتھ اکتالیس بار پڑھے اور پھونک مارے اللّه تعالیٰ اسے اس سورۃ کی برکت سے شفا بخشیں گے نیچے سکرول کریں اور زندگی بدلنے والی پوسٹس پڑھیں۔ Sh

کیا آپ چاول ابالنے کے بعد ان کا پانی ہر گز نہ پھینکیں کیونکہ اس سے آپ ہر ماہ ہزاروں روپےبچا سکتے ہیں،جانئے دلچسپ معلومات

Tags
واتین کے ساتھ مرد حضرات بھی چہرے کی جھریاں، چھائیاں اورکیل مہاسے سے بچنے کیلئے کریموں پر ہر ماہ ہزاروں روپے لگادیتے ہیں مگر نتیجہ وہی ڈھاک کے تین پات۔ اگر آپ چہرے کیجھریاں، چھائیاں اور کیل مہاسوں کے اساتھ چہرے کو جوان اور خوبصورت بنانا چاہتے ہیں تو چاولوں کا پانی کا استعمال کریں، اس سے نہ صرف آپ ان مصنوعی کریموں سے بچ سکتے ہیں بلکہ ہزاروں روپے کے ضیاع سے بھی بچ جائیں گے۔ جلد کے مردہ خلیوں کو ختم کر کے نئی جلد پیدا کرنے کیلئے چاولوں کو 20منٹ تک ہلکی آنچ پر ابلانے کے بعد پانی ایک بوتل میں رکھ لیں۔ اب اس پانی کو آپ کیل مہاسوں سے نجات حاصل کرنے کیلئے استعمال کر سکتے ہیں اور حیرت انگیز طور پر یہ سر کے بالوں کیلئے بھی نہایت مفید ہے۔ کنڈیشنر کی جگہ چاولوں کا یہ پانی بالوں پر لگائیں اور کچھ دیر انتظار کے بعد نیم گرم پانی سے بال دھول لیںآپ اپنے بالوں میں فرق صاف محسوس کریں گے اس کی وجہ سے بال نرم و ملائم اور چمکدار ہوں گے۔ ایگزیما کے شکار افراد بھی چاولوں کا یہ پانی استعمال کر سکتے ہیں۔ خارش ، چبھن اور جلن کی شکایت پر چالوں کا یہ پانی دن میں دو سے تین بار لگائیں آپ افاقہ محسوس

کمزور نظر کی چند علامات ہرگز نظر انداز نہ کریں

Tags
نظر کی کمزوری ایک عام مسئلہ بنتا جا رہا ہے، حتٰی کہ آپ کو اکثر سکول جاتے بچے عینک لگائے نظر آتے ہوں گے۔ آنکھوں کی کمزوری کی کئی وجوہات ہو سکتی ہیں، جیسا کہ لمبے دورانیے کے لیے اور انتہائی قریب بیٹھ کر ٹی وی دیکھنا، مسلسل موبائل فون ، ٹیب یا لیپ ٹاپ کا استعمال،مسلسل تیز روشنی میں پڑھتے رہنا، غیر متوازن کھانا اور غذا میں وٹامن اے کی کمی نظر کی کمزوری کا باعث بن سکتے ہیں۔بالغ افراد میں الکوحل کا مسلسل استعمال بھی نظر کی خرابی کا باعث بنتا ہے۔ نظر کی صحتمندی کے لیے احتیاط باقاعدہ چیک اپ ضروری ہےجسمانی صحت کے سالانہ چیک اپ کی طرح آنکھوں کا سالانہ چیک بھی اتنا ہی اہم اور ضروری ہے۔ایسے لوگ جو صحت کے عمومی مسائل کا شکار رہتے ہیں، ان کے لیے آنکھوں کا باقاعدگی سے چیک اپ کروانا انتہائی اہم ہے۔ اگر آپ کی فیملی ہسٹری میں آنکھوں کے مسائل موجود رہے ہیں تو آپ کو اس بارے میں انتہائی محتاط رہنے کی ضرورت ہے، کسی بھی علامت کو محسوس ہوتے ہی معالج سے فوراً رابطہ اور چیک کروانا انتہائی اہم اور ضروری ہے کیونکہ بروقت علاج اور تدارک سے بیماری اور اس کے مضر اثرات سے بچا جا سکتا ہے۔اس کے لیے سب سے اہم مرحلہ یہ ہے کہ آپ کوئی بھی علامت محسوس ہوتے ہی اپنی فیملی یا ذاتی معالج سے ملیں اور اس سے اپنی علامات کے بارے میں معلومات لیں، اور اگر آپ کا معالج محسوس کرے کہ آپ کو سپیشلٹ ڈاکٹر کو چیک کروانے کی ضرورت ہے تو وہ آپ کو کوئی اچھا سپیشلٹ تجویز کرے گا۔ اگر سپیشلسٹ آپ کی نظر میں کسی قسم کا مسئلہ یا کوئی ابتدائی علامت دیکھے تو وہ آپ کو اس کے مطابق دوائیاں تجویز کرے گا جنہیں استعمال کرنے سے آپ ان ابتدائی علامات سے چھٹکارا حاصل کر سکتے ہیں۔ یاد رہے، احتیاط علاج سے بہتر ہے، اور اسی طرح ابتدائی علاج، بیماری کے طول پکڑ جانے پر کروائے جانے والے علاج سے ہزار درجہ بہتر ہے۔نظر کے مسائل کی ممکنہ علاماتاگر آپ اپنی نظر میں مندرجہ ذیل علامات میں سے کوئی بھی محسوس کرتے ہیں، تو فوراً اپنے آنکھوں کے معالج Ophthalmologist سے رابطہ کریں، چاہے آپ نے کچھ دن پہلے ہی آنکھوں کا معائنہ کروایا ہو۔ آنکھوں میں اچانک اور شدید درد آنکھ کے اندر یا ارد گرد درد کا بار بار ہونا نگاہ کا دھندلا ہونا یا چیزوں کا ڈبل نظر آنا چمک، روشنی یا چمکدار روشن نقطوں کا دکھائی دینا روشنی یا لائٹ کے گرد قوس قزح جیسے رنگوں یا روشنی کا ہالہ دکھائی دینا ہوا میں مکڑی کے جالے جیسے اشکال تیرتی نظر آنا ایک یا دونوں آنکھوں پر پردہ سا پڑتا ہوا دکھائی دینا آنکھ میں “کپ میں سیاہی بھرنا” جیسا احساس ہونا روشنی اور چمک سے غیر معمولی اور درد سے بھرا احساس ہونا سوجی ہوئی لال آنکھیں عینیہiris [ آنکھ میں قرنیے کے پیچھے کی گول رنگدار جھلی جس کے پیچ میں گول سوراخ ہوتا ہے] کے رنگ کا تبدیل ہونا آنکھ کی پتلی میں سفیدی ہونا آنکھ میں اچانک مستقل طور پر تیرنے والے اجزاء کا بننا آنکھ میں چبھن، جلن یا پھر بھاری مقدار میں آنکھ سے مواد کا اخراج ہونا نگاہ میں اچانک کسی بھی قسم کی تبدیلینظر کے مسائل کی ممکنہ دیگرعلاماتنظر کے مسائل کی نشاندہی کے لیے مزید کئی علامات بھی ہو سکتی ہیں جو کہ روز مرہ کے معاملات سے متعلقہ ہیں۔ یہ علامات درج ذیل ہیں۔ چلنے میں، یا ابھری ہوئی سطحوں پر چلنے میں دشواری کا سامنا ہچکچاتے ہوئے چلنا اور قدم اٹھانے میں ہچکچاہٹ کا سامنا ہونا سیڑھیاں چڑھتے اور اترتے وقت انتہائی سست روی اور احتیاط سے اترنا پیروں کو گھسیٹ کر چلنا چلتے ہوئے دیواروں سے لگ کر چلنا چیزوں کو پکڑتے ہوئے کبھی ہاتھوں کا پیچھے رہ جانا اور کبھی چیز سے آگے نکل جانا مختلف روزمرہ کے معمولات کو کرنا چھوڑ دینا یا انہیں مختلف طریقے سے کرنا مثلاً مطالعہ، ٹی وی دیکھنا، ڈرائیونگ، چلنا پھرنا یا اپنے مشاغل کو کرنے سے ہچکچانا یا انہیں ترک کر دینا آنکھ میں بھینگا پن ہونا یا چیزوں کو دیکھتے وقت سر کو کسی مخصوص زاویے پر ایک طرف جھکا کر دیکھنا چہروں اور چیزوں کو پہچاننے میں دشواری کا سامنا ہونا مانوس ماحول میں بھی ذاتی اشیاء کو ڈھونڈنے میں دشواری کا سامنا کرنا چیزوں کو تھامتے ہوئے بے یقینی کی کیفیت کا اظہار رنگوں کی پہچان میں دشواری کا سامنا کھانا کھاتے ہوئے کھانے کو چمچ سے اٹھانے میں دقت کا سامنا کھانا کھاتے ہوئے پلیٹ سے باہر گرا دینا گلاس یا کپ میں پینے والی اشیاء ڈالتے ہوئے گلاس کے بھرنے کا پتہ نہ چلنا اخبار یا ڈاک وغیرہ کو نہ پڑھنا پڑھنے والی چیز کو آنکھ کے انتہائی قریب رکھ کر پڑھنا لکھنے میں دقت ، خاص کر لائن میں لکھنے میں مسائل کا سامنا ہونایاد رہے کہ یہ تمام علامات ہیں جن سے اندازاہ لگایا جا سکتا ہے کہ آپ کی نظر کمزور ہورہی ہے یا کسی مسئلہ کا شکار ہے، ایسی کسی بھی علامت کو محسوس کرتے ہیں اپنے ذاتی معالج یا آنکھوں کے علاج کے ماہر سے فوری رابطہ کریں اور کسی بھی ممکنہ پیچیدہ بیماری سے بچیں۔ یاد رہے کہ احتیاط بیماری اور پیچیدگی، دونوں سے بچاتی ہے۔ S

شوگر کے مرض کو جڑ سے ختم کرنے کا علاج مل گیا

Tags
سمندر کی تہہ میں موجود پتھروں میں چھپی رہنے والی ایک مچھلی کے نظام انہضام میں تحقیق کاروں کو ذیابیطس کے مکمل خاتمے کا علاج مل گیا۔تحقیق کاروں کے مطابق میکسیکو کے سمندر میں پائی جانے والی بصارت سے محروم ایک مخصوص مچھلی (Cave Fish) میں انسولین سے مزاحمت اور خون کے شوگر لیول میں اضافہ دیکھنے میں آیا ہے۔یہ علامات انسانوں میں ذیابیطس کی قسم دوم کے مریضوں میں بھی پائی جاتی ہیں۔جب کہ ان مچھلیوں کا جنیاتی تغیر (Genetic Mutation) بھی ذیابیطس کے قسم دوم کے مریضوں سے مماثلت رکھتا ہے۔ حیرت انگیز طور پر یہ مچھلیاں ذیابیطس دوم کے خلاف مزاحمت کا ایک مضبوط نظام رکھتی ہے جس سے انسانوں میں ذیابیطس کے مکمل علاج کی امید پیدا ہو گئی ہے۔ہارورڈ میڈیکل یونیورسٹی کے محققین نے ٹیٹرا میکسیکین مچھلیوں پر لکھے تحقیقی مقالے میں بتایا ہے کہ عمومی طور ’ہائی شوگر لیول‘ کی وجہ سے بلند فشار خون اور خون کی نالیوں میں توڑ پھوڑ جیسی پیچیدگیاں پیدا ہوجاتی ہیں لیکن حیرت انگیز طور پر ان مچھلیوں میں ایسا نہیں پایا گیا بلکہ شوگر لیول میں اضافہ صحت کے لیے فائدہ مند نظر آتا ہے۔سائنسی جریدے نیچر میں شائع ہونے والے اس مقالے میں بتایا گیا ہے کہ ٹیٹرا مچھلیوں میں پائے جانے والے ایک محفوظ نظام کے سبب یہ مچھلیاں شوگر لیول زیادہ ہونے کے باوجود اس کی پیچیدگیوں سے محفوظ رہتی ہے۔ اس راز کو جاننے کے لیے تحقیق کا آغاز کردیا گیا ہے جس کے بعد امید پیدا ہوگئی ہےسائنس اب ذیابیطس کا مقابلہ کرنے میں کامیاب ہوجائے گی۔سائنس دانوں نے اس تحقیق کو ذیابیطس کے علاج کو سمجھنے کے لیے مفید قرار دیا ہے۔ اگر تحقیق کار مچھلی میں موجود نظام کو سمجھنے کے قابل ہوگئے اور جین کی تبدیلی کو پرکھ پائے تو یہ ذیابیطس کے مریضوں کے لیے اس صدی کی سب سے بڑی خبر ثابت ہو گی جو ذیابیطس کے خلاف مزاحمت پیدا کرنے اور ذیابیطس کی پیچیدگیوں سے محفوظ رکھنے میں کامیاب ہوجائے گی۔ S

قرآن حکیم کی وہ صورت جسے صبح روشنی نکلنے سے قبل پڑھیں تو جسم میں ایسی تبدیلی آئے گی کہ آپ خود دنگ رہ جائیں گے

Tags
دنیا میں انسان کو مختلف امراض سمیت کئی طرح کی بیماریوں کا سامنا کرنا پڑسکتا ہے لیکن اللہ تعالیٰ نے پہلے ہی اپنے کلام مبارکہ یعنی قرآن مجید میں ان پریشانیوں کا حل رکھا ہے لیکن بدقسمتی سے ہم اس پر توجہ نہیں دیتے ، اگر کسی شخص کو بیماری کے سبب کسی جسمانی عضو کے بیکار ہونے. کا ڈر ہو تو قرآن مجید کا دل کہلانے والی سورۃ یٰسین کو ہر روز صبح و شام تینمرتبہ پڑھ کر اس عضو پر دم کرے، اسی طرح تنہائی میں بیٹھ کر پڑھے تو دل خوشی محسوس کرے۔ سورج نکلنے سے پہلے سورۃ یٰسین پڑھے تو سستی و کاہلی دور و۔سورۃ یٰسین اس کے علاوہ درج ذیل پریشانیوں سے نجات کیلئے پڑھی جاسکتی ہے ۔بیماری سے نجات:روزنامہ امت کے مطابق اگر کوئی بہت بیمار ہو تو اس کے سرہانے 8 مرتبہ اس8 مرتبہ اس سورہ مبارکہ کو پڑھیں، حق تعالیٰ شفائے کاملہ عطا فرمائے گا۔ اگر کوئی شخص کسی خطرناک نوکری پر مقرر ہو تو وہ 2مرتبہ پڑھ کر اپنے کام پر جایا کرے، حق تعالیٰ نے چاہا تو بخیریت واپس آئے گا۔کسی بھی مشکل کام کی ابتدا کرتے وقت پڑھیں تو وہ کام بخیر انجام پذیر ہوگا۔اگر کسی شخص کو بیماری کے سبب کسی جسمانی عضو کے بیکار ہونے کا ڈر ہو تو اس سورہ پاک کو ہر روز صبح و شام تین مرتبہ پڑھ کر اس عضو پر دم کرے۔ حق تعالیٰ نے چاہا تو شفائے کاملہ عطا ہوگی۔اگر کسی بیماری کی حالت ایسی ہو کہ وہ مرض کے غلبے اور شدت کی وجہ سے خود نہ پڑھ سکتا ہو تو دوسرا شخص باوضو حالت میں بیمار کی آنکھوں میں آنکھیں ڈال کر مفرد عدد کے مطابق پڑھے۔ رب تعالیٰ شفاءطافرمائے گا۔ہر روز نماز فجر کے بعد یا سلام کا بکثرت ورد کرنے سے دل میں سارا دن پاکیزہ خیالات پیدا ہوتے ہیں اور دل نیکی کے کامون کی طرف مائل رہتا ہے۔یہ عمل طلوع آفتاب سے پہلے تک کرنا انتہائی زوداثر ہوتا ہے۔محتاجی دور:اس سورہ مبارک کو بکثرت پڑھنے سے لوگوں میں عزت و مرتبہ عطا ہوگا۔تنہائی میں بیٹھ کر پڑھے تو دل خوشی محسوس کرے۔ سورج نکلنے سے پہلے پڑھے تو سستی و کاہلی دور و۔نماز فجر کے بعد پڑھنے والا کبھی محتاج نہ ہو۔طالبعلم اسے اپنے ورد میں رکھے تو حافظہ تیز ہو۔اس سورہ پاک کے بارے میں بہت سی روایات کے مطابق اس میں اس اعظم ہے۔اس سورہ مبارک کو بکثرت پڑھنے والے کی عمر میں رب تعالیٰ درازی اور خیروبرکت عطا فرمات اہے۔مقدمات میں انصاف کے جلداور فوری حصول کے لئے اس سورہ مبارک کو بکثرت پڑھنا انتہائی کارگر ہے۔مستجاب الدعا:اگر کوئی شخص جمعرات کے دن نماز چاشت کے بعد500 بار پڑھے اور پھر رب تعالیٰ کے حضور جو بھی دعا مانگے گا، حق تعالیٰ اسے قبول ومنظورفرمائے گا۔جمعرات کو فجر کی سنتوں اور فرضوں کے درمیان 10 مرتبہ پڑھے گا تو خدا تعالیٰ کے حضور مقرب ہوگا۔اگر آٹھ یوم تک مسلسل 46 مرتبہ پڑھے تو جس نیت سے پڑھے گا، رب تعالیٰ اسے پورا فرمائے گا۔اس سورہ پاک کا پڑھنے والا مستجاب الدعوات ہوجاتا ہے۔ دعا کی مقبولیت کے لئے یہ اسم مبارک خوب تر ہے۔دلی مراد کا حصول:اگر کسی کے کان میں کسی بھی وجہ سے درد ہو تو روئی لے کر اس پر ایک ہزار مرتبہ یاسلام پڑھ کر دم کریں اور روئی کو کان میں رکھ لیں تو حق تعالیٰ نے چاہا تو شفا عطا ہوگی۔اگر کوئی نماز فجر کے بعد ہر روز11مرتبہ یہ سورہ پڑھنا اپنا معمول بنالے تو وہ جو بھی جائز دعارب تعالیٰ سے مانگے تو وہ قبولیت کا شرف حاصل کرلے گی۔ اس سورہ پاک کا بکثرت ذکر کرنے والا چشم خلائق میں عزیز و محترم ہوتا ہے۔ مشکلات اس کے رستے میں کبھی حائل نہیں ہوتیں۔اونچے مرتبے تک پہنچنے کے لئے اس سورہ مبارک کا ورد کرنا راستے کی تمام رکاوٹوں کو دور کرکے دلی مراد کو پورا کرنے کا سبب بنتا ہے S